ویرائزن کا یاہو کو پانچ ارب ڈالر میں خریدنے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption سنہ 2008 میں یاہو کو خریدنے کے لیے 44 ارب ڈالر کی پیش کش کی گئی تھی

امریکی انٹرنیٹ کمپنی ’یاہو‘ کو امریکی ٹیلی کام کمپنی ویرائزن تقریباً پانچ ارب ڈالر میں خرید رہی ہے۔

یاہو کو مشہور انٹرنیٹ کمپنی ’اے او ایل‘ کے ساتھ جوڑ دیا جائے گا جسے ویرائزن نے گذشتہ سال خریدا تھا۔

*ڈیلی میل کا یاہو خریدنے پر غور

پانچ ارب ڈالر میں طے کیے جانے والے اس سودے کی قیمت سنہ 2008 میں 44 ارب ڈالر تھی جو اس وقت مائیکروسافٹ کی پیش کش تھی۔

ویرائزن کا کہنا ہے کہ ہر ماہ ایک ارب سے زیادہ صارفین کی طرف سے استعمال ہونے والا یاہو کا مرکزی انٹرنیٹ کاروبار کمپنی کو ایک موبائل میڈیا کمپنی بنا دے گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption یاہو کے چینی کمپنی علی بابا میں قیمتی حصے کو اس سودے میں نہیں شامل کیا گیا ہے

یاہو کی سربراہ مریسا میئر نے کہا ’یاہو ایک ایسی کمپنی ہے جس نے دنیا کو بدل کر رکھ دیا ہے۔ ویرائزن اور اے او ایل کے ضم ہو جانے کے بعد بھی یہ دنیا کو بدلتا رہے گا۔‘

لیکن سنہ 2017 میں مکمل ہونے والی اس خریداری کے بارے میں سوالات اٹھ رہے ہیں کہ کیا یاہو برانڈ کا نام و نشان تو نہیں مٹ جائے گا۔

’سٹریٹیجی اینالٹکس‘ کے ڈائریکٹر مائیکل گڈمن کا کہنا ہے ’یہی تو بڑا سوال ہے کہ وہ برانڈز کے ساتھ کیا کریں گے؟‘

اسی بارے میں