اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’پرفارمنس، ڈسپلن اور فٹنس لمحہ فکریہ‘

پاکستان کی اے کرکٹ ٹیم کے بالنگ کوچ اور سابق سیلیکٹر کبیر خان کا کہنا ہے کہ پاکستان میں کرکٹ کا ڈومیسٹک سٹرکچر ایسے بنایا ہی نہیں گیا کہ جس سے اچھے پلئیر سامنے آ سکیں۔ بی بی سی اردو کے ساتھ ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم کی بیٹنگ پرفارمنس، ڈسپلن اور فٹنس لمحہ فکریہ ہیں۔ نامہ نگار عادل شاہ زیب نے ان سے پہلا سوال یہ کیا کہ کئی سینئیر پلئیرز یہ کہہ چکے ہیں کہ پاکستان میں ورلڈ کلاس ٹیلنٹ ہے ہی نہیں، تو آپ کیا رائے رکھتے ہیں؟