کوئٹہ میں شدت پسند حملہ
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’کوئٹہ دھماکہ انٹیلیجنس کی ناکامی نہیں تھی‘

صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں کل ہونے والے دھماکے سے ہلاک ہونے والے بيشتر افراد کي تدفين کردي گئي ہے۔ ملک بھر ميں ہلاک شدگان کي ياد ميں تين روزہ سوگ منايا جارہا ہے۔ بيشتر کاروباري مراکز بند' اور عدالتوں ميں بھي کام بند رہا۔ خودکش دھماکے میں ہلاک شدگان کی تعداد 71 تک پہنچ چکي ہے جن ميں کم از کم 40 وکلا بھي شامل ہيں۔ بی بی سی اردو سے بات کرتے ہوئے صوبے کے وزیر اعلی ثنا اللہ زہری نے یہ تسلیم کرنے سے انکار کیا انٹلیجنس اداروں کی ناکامی کي وجہ سے يہ حملہ ہوا ہے۔