BBCi Home PageBBC World NewsBBC SportBBC World ServiceBBC WeatherBBC A-Z
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
South Asia News
BBCHindi.com
BBCPersian.com
BBCPashto.com
BBCArabic.com
BBCBengali.com
Learning English
 
 
  ہماری کھیلوں کی سائٹ
 
 
  احمد قریع، ہمہ جہت شخصیت
 
 
  کین کن میں کرنا کیا ہے؟
 
 
  شیرون کا دورۂ ہند
 
 
  ’غیرت‘ کے سات سو شکار
 
 
  قبائلی علاقوں کے بھوت اسکول
 
 
  مشرق وسطی میں طاقت کا نیا محور
 
 
  گیارہ ستمبر
آخری باتیں
 

جنگ عراق کا سچ جھوٹ
 

کراچی ساحل: زہریلی لہریں
 

موسیقی، فلم، ٹی وی ڈرامہ
 

دنیا ایک کلِک دور
 
 
 
:تازہ خبریں
 
میں غدار نہیں: مشرف
’القاعدہ اب بھی سرگرم ہے‘
اسامہ کی نئی وڈیو ٹیپ
’دراندازی بند کرائیں گے‘
سویڈش وزیر چل بسیں
جنس معلوم کرنےپرپابندی
بیمہ کمپنیاں القاعدہ پر مقدمہ کریں گی
یونان: پاکستانی ڈوب گئے
’نقشِہ راہ پر قائم ہیں‘
کراچی ساحل: پابندی برقرار
سامان میں انسان
بلوچستان: وزیر کے بھائی گرفتار
تعلقات مضبوط کرنےکی ضرورت: شیرون
لڑکا، امریکی فوجی ہلاک
بالی دھماکہ: موت کی سزا
گرینچ 11:59 - 14/06/2003
سائبر حملوں کے خلاف اقدام
بھارت نے ایک امریکی اشتراک سے ایک سنٹر قائم کر لیا
بھارت نے ایک امریکی اشتراک سے ایک سنٹر قائم کر لیا

بھارت میں انٹر نیٹ اور ویب سائٹس کو محفوظ بنانے کے لیے قائم کیا جانے والا پہلا انٹر نیٹ حفاظتی مرکز جلد ہی کام شروع کر دئے گا۔

یہ سنٹر حکومتی اور دفاعی اداروں کی ویب سایٹس کو انٹر نیٹ کے ذریعے کئے جانے والے سائبر حملوں سے محفوظ بنانے کے لئے قائم کیا گیا ہے۔

انٹرنیٹ کےحفاظتی مرکز کے اس منصوبے پر انفارمیشن ٹیکنولوجی کی وزارت اور امریکہ کا ایک سیکیورٹی گروپ مشترکہ طور پر کام کر رہے ہیں۔

اس سنٹر کے افتتاح کرنے کی تاریخ کا اعلان بھارت کے انفارمیشن ٹیکنولوجی کے سیکریٹری راجیو راتھن شاہ نے جنوبی بھارت کے شہر بنگلور میں کیا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت سرکاری ، دفاعی اور تجارتی اداروں کی ویب سائٹس کو محفوظ بنانے کی بھر پور کوشش کر رہی ہے۔

دارالحکومت دہلی میں قائم اس سنٹر کے منصوبے پر دو کروڑ ڈالر خرچ کئے گئے ہیں۔

اس طرح کا ایک اور مرکز بنگلور میں بھی قائم کیاجائے گا۔ حکومت اس بارے میں ملکی اور غیر ملکی کمپنیوں میں پائے جانے والی تشویش کو ختم کرنے کے لیے قانون سازی کرنے پر غور کر رہی ہے۔

ساتھن شاہ نے کہا کہ اس شعبے سے منسلک افراد کی اعتماد بحال کرنے کے لیےقانون کا یہ مسودہ پارلیمان میں پیش کئےجنانے کے لیے تیار ہے۔
 
 

 urdu@bbc.co.uk
 
 
 
 < عالمی خبریں 43 زبانوں میںواپس اوپر ^^ BBC Copyright