BBCi Home PageBBC World NewsBBC SportBBC World ServiceBBC WeatherBBC A-Z
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
South Asia News
BBCHindi.com
BBCPersian.com
BBCPashto.com
BBCArabic.com
BBCBengali.com
Learning English
 
 
  ہماری کھیلوں کی سائٹ
 
 
  احمد قریع، ہمہ جہت شخصیت
 
 
  کین کن میں کرنا کیا ہے؟
 
 
  شیرون کا دورۂ ہند
 
 
  ’غیرت‘ کے سات سو شکار
 
 
  قبائلی علاقوں کے بھوت اسکول
 
 
  مشرق وسطی میں طاقت کا نیا محور
 
 
  گیارہ ستمبر
آخری باتیں
 

جنگ عراق کا سچ جھوٹ
 

کراچی ساحل: زہریلی لہریں
 

موسیقی، فلم، ٹی وی ڈرامہ
 

دنیا ایک کلِک دور
 
 
 
:تازہ خبریں
 
میں غدار نہیں: مشرف
’القاعدہ اب بھی سرگرم ہے‘
اسامہ کی نئی وڈیو ٹیپ
’دراندازی بند کرائیں گے‘
سویڈش وزیر چل بسیں
جنس معلوم کرنےپرپابندی
بیمہ کمپنیاں القاعدہ پر مقدمہ کریں گی
یونان: پاکستانی ڈوب گئے
’نقشِہ راہ پر قائم ہیں‘
کراچی ساحل: پابندی برقرار
سامان میں انسان
بلوچستان: وزیر کے بھائی گرفتار
تعلقات مضبوط کرنےکی ضرورت: شیرون
لڑکا، امریکی فوجی ہلاک
بالی دھماکہ: موت کی سزا
گرینچ 23:54 - 14/06/2003
انٹرنیٹ سکیورٹی کا ادارہ قائم
بھارت سرکاری اداروں کوہیکروں سے بچانے کیلیےکوشاں ہے۔
بھارت سرکاری اداروں کوہیکروں سے بچانے کیلیےکوشاں ہے۔

بھارت میں پہلا انٹرنیٹ سکیورٹی کا مرکز جولائی سے کام کرنا شروع کردے گا۔

اس مرکز کا مقصد دفاعی اور سرکاری محکموں کی ویب سائٹوں کو ہیکروں کے حملوں سے بچانا ہے۔ اس منصوبے پر وفاقی وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی امریکہ کی ایک سکیورٹی گروپ سرٹ کی مدد سے کام کررہی ہے۔

سرٹ ایک تعلیم و تحقیق کا ادارہ ہے جو کارنیگی میلون یونیورسٹی کے تحت کام کرتا ہے اور اس کا مقصد انٹرنیٹ سکیورٹی کو بہتر بنانا ہے۔

اس مرکز کے کام شروع کرنے کی تاریخ کا اعلان انفارمیشن ٹیکنالوجی کے سیکریٹری راجیو رتن شاہ نے بھارت کےشہر بنگلور میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ انٹر نیٹ سکیورٹی کے بارے حکومت دفاعی، کاروباری اور سرکاری اداروں کو ہیکروں کے حملوں سے بچانے کے لیے بہت زیادہ دلچسپی لے رہی ہے۔

بھارت کے دارالحکومت دہلی میں واقع اس مرکز پر تقریبا بیس ملین ڈالر لاگت آئی ہے۔

اسی سلسلے کا دوسرا مرکز بنگلور میں واقع بھارت کے ممتاز تحقیقی ادارے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف سائنس میں قائم کیا جائے گا۔

حکومت اس سلسلے میں پارلیمنٹ میں ایک بل کو پیش کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جس کے تحت ملکی اور غیر ملکی سکیورٹی کے حوالے ہونے والی گفتگو اور اعداد وشمار کو تحفظ فراہم کرنا ہے۔

رتن شاہ نے کہا ہم نے ایسے آئینی مسودات تیار کیے ہیں جس سے بھارت میں انٹرنیٹ کے حوالے سے گاہکوں اور دوسرے کام کرنے والوں کا اعتماد بحال ہوگا۔
 
 

 urdu@bbc.co.uk
 
 
 
 < عالمی خبریں 43 زبانوں میںواپس اوپر ^^ BBC Copyright