BBCi Home PageBBC World NewsBBC SportBBC World ServiceBBC WeatherBBC A-Z
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
South Asia News
BBCHindi.com
BBCPersian.com
BBCPashto.com
BBCArabic.com
BBCBengali.com
Learning English
 
 
  ہماری کھیلوں کی سائٹ
 
 
  احمد قریع، ہمہ جہت شخصیت
 
 
  کین کن میں کرنا کیا ہے؟
 
 
  شیرون کا دورۂ ہند
 
 
  ’غیرت‘ کے سات سو شکار
 
 
  قبائلی علاقوں کے بھوت اسکول
 
 
  مشرق وسطی میں طاقت کا نیا محور
 
 
  گیارہ ستمبر
آخری باتیں
 

جنگ عراق کا سچ جھوٹ
 

کراچی ساحل: زہریلی لہریں
 

موسیقی، فلم، ٹی وی ڈرامہ
 

دنیا ایک کلِک دور
 
 
 
:تازہ خبریں
 
میں غدار نہیں: مشرف
’القاعدہ اب بھی سرگرم ہے‘
اسامہ کی نئی وڈیو ٹیپ
’دراندازی بند کرائیں گے‘
سویڈش وزیر چل بسیں
جنس معلوم کرنےپرپابندی
بیمہ کمپنیاں القاعدہ پر مقدمہ کریں گی
یونان: پاکستانی ڈوب گئے
’نقشِہ راہ پر قائم ہیں‘
کراچی ساحل: پابندی برقرار
سامان میں انسان
بلوچستان: وزیر کے بھائی گرفتار
تعلقات مضبوط کرنےکی ضرورت: شیرون
لڑکا، امریکی فوجی ہلاک
بالی دھماکہ: موت کی سزا
گرینچ 15:36 - 09/07/2003
بجلی، ڈیٹا ایک ساتھ
اپنے لیپ ٹاپ، فون اور دوسرے آلات کو سفر کے دوران چارج کرنے کی غرض سے آپ کو کئی قسم کے اڈیپٹر ساتھ لے کر چلنا پڑتا ہے، لیکن اب شاید اس کی ضرورت نہیں رہے گی۔

اڈیپٹروں کی جگہ اب جلد اس طرح کے

نیٹ ورک وجود میں آ سکتے ہیں جو نیٹ ورک میں موجود کمپیوٹر یا دوسرے آلات کو ڈیٹا کے ساتھ ساتھ بجلی بھی فراہم کریں گے۔ نیٹ ورک ساز و سامان بنانے والی چند کمپنیوں نے اپنی مصنوعات میں پہلے ہی ڈیٹا۔پارو کیبل نصب کرنا شروع کر دئے ہیں۔

دنیا بھر میں کمپیوٹر نیٹ ورک کے پلگ بنیادی طور پر ایک جیسے ہوتے ہیں، جس سے اس بات کا امکان بڑھا ہے کہ دنیا بھر میں پاور۔ڈیٹا کیبل سے اضافی بجلی سپلائی کرنے کا کام لیا جا سکتا ہے۔

سب سے زیادہ استعمال میں لائی جانی والی نیٹ ورک ٹیکنالوجی، یعنی ایتھرنیٹ ، کی حال ہی میں تیسویں سالگرہ منائی گئی۔ ایتھرنیٹ کے ذریعے عام طور پر یکجا کئے گئے آلات نیٹ ورک پر صرف ڈیٹا منتقل کرتے ہیں۔ تاہم جلد ایتھرنیٹ کی بنیادی خصوصیات میں اس طرح کی تبدیلی کی جا سکتی ہے کہ ایک ہی تار کے ذریعے بجلی اور ڈیٹا ساتھ ساتھ منتقل کئے جا سکیں۔

اسرائیلی کمپنی PowerDsine کے عامر لہر کا کہنا ہے کہ ڈیٹا کیبل کے ذریعے بجلی سپلائی کرنے کے عمل کو گزشتہ چار برس میں بہتر کر لیا گیا ہے۔ انکا کہنا ہے کہ یہ اسی بنیادی ’نیٹ ورکِنگ‘ ٹیکنالوجی کی توسیع ہے جس کے تحت ڈیٹا کو وولٹیج میں تبدیل کیا جاتا ہے تاکہ اسے تاروں کے ذریعے منتقل کیا جا سکے۔

مسٹر لہر کے مطابق امریکہ کے الیکٹریکل اور الیکٹرانِک انجینئرز کا ادارہ اس نئی ٹیکنالوجی کے لئے درکار تبدیلیوں کی منظوری اسی ماہ دے دے گا۔

عامر لہر کا کہنا ہے کہ بجلی کے پلگ اور وولٹیج

وغیرہ ہر ملک میں یکساں نہیں ہوتے، تاہم ایتھرنیٹ جہاں بھی نصب کیا جائے اس میں ایک ہی طرح کے ’کنیکٹر‘ اور تاریں استعمال کئے جاتے ہیں۔ لہر نے کہا ’ RJ45 کنیکٹر دنیا کے ہر حصے میں استعمال کیا جاتا ہے، ایشیا، یورپ ہو یا پھر امریکہ۔‘

’ایتھرنیٹ کے دریغے بجلی فراہم کرنے کے نظام میں پہلے سے موجود تاروں کا استعمال ہوتا ہے اور موجودہ ڈھانچے میں کوئی تبدیلی کی ضرورت نہیں۔
 
 

 urdu@bbc.co.uk
 
 
 
 < عالمی خبریں 43 زبانوں میںواپس اوپر ^^ BBC Copyright