BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت:
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
لشکر جھنگوی کے تین ارکان گرفتار
 
دھماکہ
کراچی میں شدت پسند کارروائیوں کا الزام لشکر جھنگوی پر لگایا جاتا ہے

کراچی پولیس کے ایک افسر نے کہا ہے کہ لشکر جھنگوی سے تعلق رکھنے والے تین افراد کو گرفتار کرکے ان کے قبضہ سے بم برآمد کیے گئے ہیں۔ پولیس کے مطابق ملزمان دہشت گردی کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

ان افراد کو جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات نارتھ کراچی میں واقع ایک گھر سے گرفتار کیا گیا۔ ان کے نام حافظ سعید، فیض اللہ اور حامد مراد بتائے گئے ہیں۔

پولیس نے ان کے قبضہ سے چھ دستی بم، تین پستول، سترہ ڈیٹونیٹر اور لشکر جھنگوی کے بارے میں تحریر مواد برآمد کیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ڈیٹونیٹر لیٹربم یا چٹھی بم میں استعمال کیے جانے تھے۔ دستی بم ایک قریبی پارک میں چھپائے گئے تھے۔

لشکر جھنگوی کو پاکستان میں غیرقانونی تنظیم قرار دیا گیا ہے۔ حکام تنظیم کو اہل تشیع اور غیرملکی شہریوں پر حملوں کا ذمہ دار ٹھہراتے ہیں۔

امریکی صحافی ڈینیئل پرل کے قتل میں بھی لشکر جھنگوی کو ملوث قرار دیا جاتا ہے۔

لشکر جھنگوی کے بارے میں خیال ہے کہ اس کے اسامہ بن لادن کی تنظیم القاعدہ اور طالبان سے قریبی روابط تھے۔

 
 
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد