BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Friday, 05 November, 2004, 05:33 GMT 10:33 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
فلمساز کی ساتھی کو موت کی دھمکی
 

 
 
خط میں قرآنی آیات اور ان کا ڈچ میں ترجمہ درج ہے۔
خط میں قرآنی آیات اور ان کا ڈچ میں ترجمہ درج ہے۔
منگل کو ایسٹرڈیم میں قتل کیے جانے والے فلمساز تھیو واں گوف کی لاش کے ساتھ منسلک پیغام میں ہالینڈ کی ایک سیاستدان کے نام موت کی دھمکی دی گئی ہے۔

ہالینڈ کے وزیر انصاف نے کہا ہے کہ مذکورہ خط میں لبرل پارٹی کی نائب عیان حرسی علی کے نام کھلی دھمکی دی گئی ہے۔

حرسی علی ہالینڈ میں قیام پذیر صومالی پناہ گزین ہیں اور انہوں نے واں گوف کی متنازعہ فلم ’سبمِشن‘ کا سکرپٹ لکھا تھا۔

یاد رہے کہ واں گوف کے قتل کے سلسلہ میں جو نوافراد گرفتار کئے گئے ہیں ان سب کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ شدت پسند مسلمان ہیں۔

ایان حرسی علی
حرسی علی جن کو ’سبمشن‘ نامی متنازعہ فلم کا سکرپٹ لکھنے پر موت کی دھمکی ملی ہے۔

وزیرانصاف پیٹ ہاین ڈونر کے مطابق دھمکی آمیز خط پر ایک نامعلوم گروپ کی طرف سے دستخط بھی موجود ہیں۔

مذکورہ خط ڈچ زبان میں لکھا ہوا ہے جبکہ اس میں عربی میں اصل قرآنی آیات اور ڈچ زبان میں ان کا ترجمہ بھی شامل ہے۔

ایک دوسراخط گرفتار کیے جانے والے ایک مشتبہ فرد سے بھی ملا ہے جس کا متن الوداعی نوعیت کا ہے اور اس میں یہ کہا گیا ہے کہ وہ اپنے مذہب کے لیے شہید ہونے کے لیے تیار ہے۔

ہالینڈ کے حکام گرفتار شدہ نوافراد کے بیرون ممالک دہشت گرد گروہوں کے ساتھ رابطے کے بارے میں تفتیش کر رہے ہیں۔ وہ اس بات کا بھی کھوج لگا رہے ہیں کہ آیا ان افراد کا گزشتہ برس کے کاسابلانکا بم دھماکے سے بھی کوئی تعلق ہے یا نہیں۔

 
 
اسی بارے میں
 
 
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد