پنجاب پولیس کا القا‏عدہ سے منسلک شدت پسندوں کی ہلاکت کا دعوی‘

Image caption پولیس حکام کے مطابق ہلاک ہونے والے شدت پسندوں کے تین دیگر ساتھی رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے ضلع گوجرانوالہ میں پنجاب پولیس کے شعبہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) نے ایک کارروائی کے دوران القاعدہ کے پانچ مشتبہ شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعوی' کیا ہے۔

یہ کارروائی جمعے اور سنیچر کی درمیانی رات واپڈا ٹاؤن بائی پائی کے قریب کی گئی۔

سی ٹی ڈی پنجاب کے ترجمان کے مطابق انہیں اطلاع ملی تھی کہ کالعدم تنظیم القاعدہ سے تعلق رکھنے والے آٹھ شدت پسند گوجرانوالہ شہر میں دہشت گردی کسی بڑی کارروائی کی تیاری کررہے ہیں۔

اسی اطلاع کی بنیاد پر پولیس نے ان کے ٹھکانے پر چھاپہ مارا اور انھیں ہتھیار پھینک کر خود کو حوالے کرنے کے لیے کہا گیا لیکن شدت پسندوں نے ہتھیار پھینکنے کی بجائے پولیس پر فائرنگ کر نی شروع کردی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پولیس کو وہاں سے پانچ شدت پسندوں کی لاشیں ملیں جو اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے مارے گئے تھے

اس کے جواب میں پولیس نے بھی دفاعی پوزیشنیں لیتے ہوئے فائرنگ کا بھرپور جواب دیا۔ اور جب دو طرفہ فائرنگ کا سلسلہ تھما تو جائے وقوعہ کا جائزہ لیا گيا۔ پولیس کو وہاں سے پانچ شدت پسندوں کی لاشیں ملیں جو اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے مارے گئے تھے۔

پولیس حکام کے مطابق ان کے تین دیگر ساتھی رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

ہلاک ہونے والے شدت پسندوں سے ایک کلاشنکوف، دو پستول، ایک 44 بور کی بندوق، گن،، دو ہینڈ گرینیڈ اور دھماکہ خیز مواد، برآمد ہوا ہے۔

سی ٹی ڈی کے ترجمان کے مطابق اس واقعے کی تحقیقات کا حکم دیا گیا ہے اور فرار ہونے والے شدت پسندوں کی تلاش کا کام جاری ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں