بلوچستان: ہرنائی میں کوئلے کے کان میں حادثہ، دو کان کن ہلاک

کوئلہ تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ہرنائی میں کوئلے کے کان میں پیش آنے والے حادثے میں دو کان کن ہلاک ہوگئے ہیں۔

ہرنائی میں اتنظامیہ کے ذرائع نے بتایا کہ یہ حادثہ اتوار کو ضلع کے علاقے تورغر میں پیش آیا۔ ذرائع کے مطابق اس علاقے میں ایک پرائیوٹ کان میں مٹی کا تودہ گرگیا۔

جس وقت مٹی کا تودہ گرا اس وقت کان کے اندر دو کان کن کام کررہے تھے۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ حادثے کے باعث دونوں کان کن ہلاک ہوگئے۔

ذرائع کے مطابق دونوں کان کنوں کا تعلق افغانستان کے علاقے اروزگان سے تھا۔

بلوچستان میں دوسری صنعتیں نہ ہونے کی وجہ سے کوئلے کی کانکنی یہاں کی سب سے بڑی صنعت ہے۔ بلوچستان میں زیادہ تر کوئلے کی کانیں کوئٹہ، کچھی، ہرنائی اور لورالائی میں ہیں۔

ہزاروں مزدور بالواسطہ یا بلاواسطہ ان کوئلہ کانوں سے وابستہ ہیں۔

مزدور تنظیموں کا کہنا ہے کہ کوئلہ کانوں میں جدید حفاظتی انتظامات نہ ہونے کی وجہ سے کان کنوں کی زندگیوں کو ہروقت خطرہ لاحق رہتا ہے یہی وجہ ہے کہ کوئلے کی کانوں میں پیش آنے والے حادثات کے باعث ہر سال کان کنوں کی ایک بڑی تعداد ہلاک اور زخمی ہوتی ہے۔

ان کوئلے کی کانوں میں کام کرنے والے مزدوروں کا زیادہ تر کا تعلق خیبر پختونخوا کے ضلع سوات اور اس سے متصل دیگر علاقوں سے ہے۔

ان کانوں میں افغانستان سے تعلق شہری بھی کام کرتے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں