پنجاب میں کارروائیاں جاری، رینجرز سے مدد لینے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption رینجرز کراچی میں بھی تعینات ہیں

پنجاب کی حکومت نے ملک میں حالیہ دہشت گردی کی لہر کے بعد انسداد دہشت گردی کے لیے جاری آپریشن میں رینجرز کی مدد لینے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ ملک بھر میں جاری کارروائیوں میں اب تک 1100 سے زائد مشتبہ افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

اتوار کو لاہور میں وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کی زیرصدارت صوبائی ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں اعلیٰ سول و عسکری حکام نے شرکت کی۔

اجلاس کے بعد جاری ہونے والے سرکاری بیان میں رینجرز سے مد د لینے کے فیصلے کا اعلان کیا گیا لیکن اس کی تفصیلات کے بارے میں کچھ نہیں کہا گیا۔

بیان کے مطابق ریجنرز سے مدد لینے کے طریقہ کار کے بارے میں تفصیلات علیحد ہ سے طے کی جائیں گی۔

اپیکس کمیٹی کے اجلاس میں طے ہوا کہ اندرونی اور بیرونی چیلنجز سے نمٹنے کیلئے تمام انیٹلی جنس اداروں کے درمیان تعاون مزید بہتر بنایا جائے گا اورصوبائی انٹیلی جنس کمیٹی کا اجلاس باقاعدگی سے منعقد ہو گا۔

دوسری جانب ملک میں حالیہ دہشت گردی کی لہر کے بعد قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ملک بھر میں ساڑھے چھ سو سے زائد کارروائیوں میں 1100 مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے۔

نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق پولیس اور رینجرز نے سب سے زیادہ کارروائیاں پنجاب میں کی ہیں اور حراست میں لیے گئے مشتبہ افراد میں افغان شہری بھی شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پنجاب میں رینجرز کو تعینات کرنے کے لیے کئی حلقوں کی طرف سے ایک عرصے سے مطالبہ کیا جا رہا تھا

قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ملک بھر اب تک 105 دہشت گردوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ بھی کیا ہے۔

پنجاب کی صوبائی ایپکس کمیٹی نے لاہور خودکش حملے کے لیے افغانستان کی سرزمین استعمال ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے افغان مہاجرین کی غیر قانونی نقل و حرکت کی سخت نگرانی کا فیصلہ کیا۔

اجلاس میں طے کیا گیا کہ پنجاب کے سرحدی اضلاع کی کڑی نگرانی کی جائے گی اور صوبہ بھر میں انٹیلی جنس کی بنیاد پر آپریشن کا دائرہ کار بھی مزید وسیع کیا جائے گا۔

اجلاس میں کالعدم تنظیموں کے خلاف بلاامتیاز ہر جگہ کارروائی کرنے اور ان تنظیموں کے تمام چھوٹے بڑے کارندوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

صوبائی ایپکس کمیٹی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سیاسی و عسکری قیادت ایک صفحے پر ہے۔

اجلاس میں وزیراعظم کے مشیر برائے قومی سلامتی ناصر جنجوعہ ،کور کمانڈر لاہور اور ڈی جی رینجرز پنجاب سمیت اعلی سول حکام شریک تھے۔

اسی بارے میں