پاکستان کے بازار

’آپ کے شہر کے بازار‘ کے عنوان سے بی بی سی کے قارئین کی بھیجی گئی تصاویر

،تصویر کا کیپشن

یہ پشاور میں واقع بورڈ بازار ہے، یہاں وہ چیزیں دستیاب ہیں جو افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ملتی ہیں۔ اسی وجہ سے بورڈ بازار کو چھوٹا کابل بھی کہا جاتا ہے۔

،تصویر کا کیپشن

یہ کوئٹہ کا لیاقت بازار ہے جہاں گاڑیوں کی پارکنگ کی وجہ سے کشادہ سڑک پر ٹریفک کا ہجوم ہوتا ہے۔

،تصویر کا کیپشن

پشاور کے اس بازار میں زیادہ تر خواتین کی اشیا جیسے پراندے، چوڑیں اور زیورات فروخت ہوتے۔

،تصویر کا کیپشن

یہ کوئٹہ کا سبزی بازار ہے۔

،تصویر کا کیپشن

یہ پستہ بازار کوئٹہ میں ہے۔ یہاں مختلف انواع و اقسام کے میوہ جات فروخت ہوتے ہیں۔

،تصویر کا کیپشن

اسلام آباد کی مقامی سبزی منڈی میں ایک بچہ اپنی مصنوعات فروخت کرتے ہوئے۔

،تصویر کا کیپشن

یہ تصویر راولپنڈی کے راجہ بازار کی ہے جہاں ضروریات زندگی کی بہت سی چیزیں دستیاب ہوتی ہیں۔

،تصویر کا کیپشن

یہ پنجاب کے شہر ساہیوال کا قدیم بازار ’سرکی بازار‘ ہے اور مقامی لوگوں کے مطابق یہ بازار پاکستان بننے سے قبل بھی یہاں موجود تھا اور تب سکھ یہاں ان سرکنڈوں کی مدد سے سِرکیاں (کچی چھتیں) بنایا کرتے تھے۔

،تصویر کا کیپشن

گوادر کے بازار میں مصالحے فروخت کرنے والی بچیاں، جو کیمرے کو دیکھ کر اپنا منہ چھپا رہی ہیں۔

،تصویر کا کیپشن

یہ تصویر اسلام آباد کے ایک بازار کی ہے جہاں کھجور کے پتوں سے بنی اشیا فروخت کی جا رہی ہیں۔

،تصویر کا کیپشن

یہ اسلام آباد میں واقع اتوار بازار ہے جہاں سامان اُٹھانے کے لیے یہ بزرگ شہری مزدوری کرتے ہیں۔