لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کا تبادلہ، دو پاکستانی بچے، تین انڈین فوجی ہلاک

پاکستان فوج تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستانی فوج کا کہنا ہے کہ انڈیا نے راولاکوٹ اور چری کوٹ سیکٹر میں دو دیہات پر مارٹر گولے پھینکے جن سے دو بچے ہلاک ہو گئے، جب کہ پاکستانی فوج کی جوابی کارروائی میں تین انڈین فوجی مارے گئے۔

شعبۂ تعلقاتِ عامہ (آئی ایس پی آر) نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کہوٹہ، چفار، سیریاں، اور ناراکوٹ کو نشانہ بنایا گیا۔ چفار گاؤں میں مارٹر شیل سخی کیانی نامی ایک شہری کے مکان پر گرے جس سے ان کے دو بچے مارے گئے۔

'انڈیا جنوبی ایشیا میں دہشت گردی کی ماں ہے'

آئی ایس پی آر کے بیان میں کہا گیا ہے کہ اس کے جواب میں پاکستانی فوج نے انڈین پوسٹوں کو نشانہ بنایا جس سے تین انڈین فوجی ہلاک اور پانچ زخمی ہو گئے۔

بیان کے مطابق لائن آف کنٹرول پر وقفے وقفے سے فائرنگ کا تبادلہ جاری ہے۔

پاکستان اور انڈیا کے درمیان متنازع کشمیر کو تقسیم کرنے والی لائن آف کنٹرول پر حالیہ دنوں متعدد بار دونوں جانب ایک دوسرے کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کے دعوے کیے جاتے رہے ہیں، جن میں عام شہریوں کی ہلاکتوں کی خبریں بھی سامنے آتی رہتی ہیں۔

یاد رہے کہ آٹھ جولائی کو انڈین فوج نے برہان وانی کی پہلی برسی کے موقع پر لائن آف کنٹرول پر راولا کوٹ سیکٹر میں شہریوں کو نشانہ بنایا تھا جس کے نتیجے سات عام شہری ہلاک ہوئے تھے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں