محمد عامر دوبارہ پنڈلی کی تکلیف میں مبتلا، ایم آر آئی سکین کے لیے ہسپتال منتقل

محدم عامر تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption حالیہ دنوں میں محمد عامر کی بین الاقوامی کرکٹ میں کارکردگی ملی جلی رہی ہے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے فاسٹ بولر محمد عامر کو دبئی ٹیسٹ کے دوسرے دن دائیں پنڈلی کی تکلیف دوبارہ ہونے کے بعد ایم آر آئی سکین کے لیے ہسپتال بھیجا گیا ہے۔

دوسرے دن کھیل شروع ہونے سے قبل ٹیم ڈاکٹر اور کوچ نے محمد عامر کو نیٹ میں بولنگ کے بعد کلیئر کردیا تھا لیکن محمد عامر صرف تین اوورز کے بعد میدان چھوڑ کر باہر جانے پر مجبور ہوگئے۔ اس سے قبل پہلے دن بھی محمد عامر کو پنڈلی کی اسی تکلیف کے سبب 16 اوورز کی بولنگ کے بعد میدان سے باہر جانا پڑا تھا اور یاسر شاہ نے ان کا اوور مکمل کیا تھا۔

ٹیم منیجمنٹ اور میڈیکل سٹاف نے پہلے دن محمد عامر کا ایم آر آئی نہیں کروایا تھا اور یہ کہا گیا کہ ان کی انجری کو مانیٹر کیا جارہا ہے لیکن دوسرے دن وہ دوبارہ ان فٹ ہو کر میدان سے باہر چلے گئے۔

گذشتہ روز پاکستانی کرکٹ ٹیم کے بولنگ کوچ اظہر محمود نے پہلے دن کے کھیل کے اختتام پر بی بی سی کو بتایا کہ محمد عامر کی یہ انجری فی الحال زیادہ سنگین نوعیت کی معلوم نہیں ہوتی تاہم میڈیکل سٹاف ان پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

دبئی ٹیسٹ کا پہلا دن سری لنکن بیٹسمینوں کے نام

'کھلاڑیوں پر بھروسہ ہے یہی دبئی ٹیسٹ جتوائیں گے'

متحدہ عرب امارات میں پاکستان کا ریکارڈ خطرے میں

محمد عامر نے سری لنکا کی پہلی اننگز میں ایک وکٹ حاصل کی ہے جو اس سیریز میں ابھی تک ان کی پہلی کامیابی بھی ہے۔ وہ ابوظہبی ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں کوئی وکٹ حاصل نہیں کرسکے تھے۔

محمد عامرنے انٹرنیشنل کرکٹ میں پانچ سالہ پابندی ختم ہونے پر واپس آنے کے بعد سے 16 ٹیسٹ میچوں میں 44 وکٹیں حاصل کی ہیں تاہم ویسٹ انڈیز کے خلاف کنگسٹن ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں چھ وکٹوں کی عمدہ کارکردگی کے بعد سے وہ آٹھ اننگز میں صرف آٹھ وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب ہوسکے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں