نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر اسلام آباد کے ہوائی اڈے سے گرفتار

صفدر تصویر کے کاپی رائٹ PMO Office

نواز شریف کے داماد اور مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) محمد صفدر کو اسلام آباد ایئر پورٹ پر احتساب کے قومی ادارے ’نیب‘ کے حکام نے اپنی حراست میں لے لیا ہے۔

محمد صفدر اپنی اہلیہ مریم نواز کے ہمراہ لندن میں بیگم کلثوم نواز کی عیادت کے لیے لندن گئے ہوئے تھے جہاں بیگم کلثوم نواز کا علاج جاری ہے۔

جب نیب حکام نے محمد صفدر کو اپنی گاڑی میں بٹھایا تو لیگی کارکنوں نے ان کی گاڑی کو گھیرے میں لے لیا، جب کہ مریم نواز ایک اور گاڑی میں اسلام آباد چلی گئیں۔

اس موقعے پر وفاقی وزرا کے علاوہ مسلم لیگ ن کے کارکن بھی موجود تھے جو ان کے استقبال کے لیے آئے ہوئے تھے۔

ن لیگ کے جو رہنما ہوائی اڈے پر موجود تھے ان میں سینیٹر پرویز رشید اور آصف کرمانی، دانیال عزیز، ماروی میمن، طارق فضل چودھری، اور دوسرے رہنما موجود تھے۔

اس موقعے پر مسلم لیگی رہنما آصف کرمانی نے کہا کہ اس سلسلے میں قانونی اور آئینی راستہ اختیار کیا جائے گا۔

احتساب عدالت نے اس ماہ کی دو تاریخ کو محمد صفدر کے اس وقت ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے جب وہ گذشتہ ماہ عدالت کے سامنے پیش نہیں ہوئے تھے۔

سپریم کورٹ میں نواز شریف اور ان کے بچوں پر پاناما پیپرز کے حوالے سے چلنے والے مقدمات میں کیپٹن صفدر کو جواب کنندہ قرار دیا گیا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں