گوادر اور مستونگ میں بم دھماکے، 35 زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جمعرات کو بم دھماکے کا دوسرا واقعہ مستونگ شہر میں پیش آیا۔ مستونگ پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا مستونگ شہر میں سلطان چوک پر ہونے والے دھماکے میں 15 افراد زخمی ہوئے۔

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر اور مستونگ میں دو بم دھماکوں میں کم از کم 35افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

گوادر میں بم دھماکے کا واقعہ بلال مسجد کے قریب پیش آیا۔ گوادر میں پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ اس علاقے میں جمعرات کی شب ایک ہوٹل پر لوگوں کی ایک بڑی تعداد کھانا کھانے کے لیے موجود تھی جب نامعلوم افراد نے ہوٹل پر دستی بم پھینکا۔

دستی بم کے پھٹنے سے زوردار دھماکہ ہوا جس میں 20 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

زخمیوں کو طبی امداد کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کیا گیا۔

بلوچستان: ضلع کیچ میں دھماکہ، چار ایف سی اہلکار ہلاک

چمن میں دھماکے کے نتیجے میں ایس ایس پی ہلاک، 11 زخمی

جمعرات کو بم دھماکے کا دوسرا واقعہ مستونگ شہر میں پیش آیا۔ مستونگ پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا مستونگ شہر میں سلطان چوک پر ہونے والے دھماکے میں 15 افراد زخمی ہوئے۔

زخمی افراد کو ابتدائی طبی امداد کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کیا گیا۔

پولیس اہلکار نے بتایا کہ دھماکے کی نوعیت کے بارے میں تحقیقات ہورہی ہے تاہم ابتدائی شواہد کے مطابق یہ دھماکہ دستی بم کی وجہ سے ہوا ہے۔

اس دھماکے میں سلطان چوک پر بعض دکانوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

بلوچستان میں گذشتہ 30 گھنٹوں کے دوران تشدد کا یہ تیسرا واقعہ تھا۔ اس سے قبل ایران سے متصل ضلع پنجگور کے علاقے گچک میں ایک حملے میں سیکورٹی فورسز کا ایک اہلکار ہلاک اور چار زخمی ہوئے تھے۔

اس واقعہ کی ذمہ داری کالعدم عسکریت پسند تنظیم بلوچستان لبریشن فرنٹ نے قبول کی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں