پشاور میں جماعتِ الدعوۃ اور فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے دفاتر بند

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں مقامی انتظامیہ نے وزارتِ داخلہ کے احکامات پر کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانیت کے دفاتر بند کر دیے گئے ہیں۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پشاور میں حافظ سعید کی تنظیم جماعت الدعوۃ اور اسی تنظیم کے زیر انتظام امدادی ادارے فلاح انسانیت کے دفاتر کو انتظامیہ نے تالے لگا دیے ہیں جبکہ اس تنظیم کے زیر انتظام تین مدرسے اور دو مساجد محکمۂ اوقات کی تحویل میں دے دی گئی ہیں۔

’پاکستان پر سفارتی دباؤ میں یقیناً اضافہ ہوگا‘

’حافظ سعید کی نظربندی قومی مفاد میں کیا گیا فیصلہ ہے‘

فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے خلاف کریک ڈاؤن شروع

سرکاری حکام نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا لاہور میں اس تنظیم اور اس کے ذیلی تنظیموں کے دفاتر پہلے ہی بند کیے جا چکے ہیں ۔

بظاہر ان دفاتر کے خلاف کارروائی کے وجہ نہیں بتائی گئی لیکن سرکاری حکام نے بتایا کہ وزارت داخلہ کے حکم پر ضلعی انتظامیہ کو لکھے گئے خط میں تنظیم اور اس سے وابستہ اداروں کے خلاف کارروائی کے حکامات جاری کیے گئے ہیں۔

یہ خط گذشتہ ہفتے کمشنر پشاور کو لکھا گیا تھا۔

مبصرین کے مطابق امریکہ کی جانب سے پاکستان پر کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ کے خلاف کارروائی کے لیے دباؤ مسلسل بڑھتا جا رہا تھا۔ امریکہ نے پاکستان کو ملنے والی امداد کو حقانی نیٹ ورک اور جماعت الدعوۃ کے خلاف کارروائی سے مشروط کیا ہے۔

پاکستان کا نام دہشت گردی کی معاونت کرنے والے ممالک کی فہرست میں ڈالنے کے حوالے پاکستان پر دباؤ بڑھ گیا تھا۔

اسی بارے میں