’اس فتح کے پیچھے اصل قوت چیئرمین عمران خان ہیں!‘

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER

اسلام آباد ہائی کورٹ کی طرف سے ملک کے وزیرِ خارجہ اور مسلم لیگ نواز کے سینئیر رہنما خواجہ آصف کو اقامہ رکھنے کے معاملے پر آئین کی شق 62 ون ایف کے تحت نااہل قرار دیے جانے کے کچھ ہی وقت بعد ٹوئٹر پر #نااہل_خواجہ_اقامہ_آصف اور #KhawajaAsif ٹرینڈ کرنے لگے۔

ان میں سے پہلے ہیشٹیگ پر پاکستان تحریک انصاف کے افیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ PTIOfficial @کی طرف سے بہت بڑی تعداد میں ٹویٹس پوسٹ کی گئیں اور اب بھی کی جا رہی ہیں۔ ان میں سے ایک ٹویٹ میں لکھا ہے کہ ’اس بات سے نظر نہیں چرائی جا سکتی کہ اس فتح کے پیچھے جو اصل قوت ہے وہ چیئرمین عمران خان ہیں۔ ہمیں فخر ہے کہ آپ ہمارے رہنما ہیں، اور تمام بدعنوان اور نااہل افراد سے پاکستانی قوم کو آزاد کر رہے ہیں۔‘

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے خواجہ آصف کی نااہلی پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ نواز شریف کا ایک اور 'درباری' اسی نمونے یعنی اقامے کو کرپشن اور منی لانڈرنگ کو چھپانے اور کھلم کھلا مفادات کے ٹکراؤ کا قصوروار ثابت ہونے پر نااہل ہوا ہے۔

پاکستان مسلم لیگ نون کی رہنما مریم نواز شریف نے نہ صرف ٹویٹ کی کہ ’جسکا ووٹ کے میدان میں مقابلہ نہیں کر سکتے اس کو فکسڈ میچ میں نا اہل کرا دو مگر یاد رکھو! عوام اب خواجہ آصف کے سائے کو بھی ووٹ دے گی انشاءالّلہ‘

مریم نواز نے ٹوئٹر پر اپنی پروفائل تصویر بھی بدل لی۔

اب تک پاکستان پیپلز پارٹی کے نمایاں رہنماؤں کی طرف سے اس فیصلے پر ویسے تو ٹوئٹر پر کوئی ردعمل نظر نہیں آیا، تاہم کئی دیگر عوامی شخصیات نے اپنے خیالات کا اظہار ضرور کیا۔

صحافی شہریار مرزا نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ ’کیا عدالتوں کو ایک ہی بار میں پاکستانی سیاست سے منسلک تمام افراد کو نااہل قرار دے کر، ایک نئی شروعات کرنی چاہیے؟‘ اس کے ساتھ ہی انہوں نے ’اس سال کے انتخابات میں اہل امیدواروں کی فہرست‘ کے عنوان سے ایک تصویر ٹویٹ کی، جس کے نیچے ہر امیدوار کے آگے نام کی جگہ ’صادق امین‘ لکھا ہے۔

اسی بارے میں