#Ideas2018: جنگی ساز و سامان کی نمائش میں خواتین کی دلچسپی

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں جاری دفاعی ساز و سامان کی نمائش آئیڈیاز میں خواتین کی ایک بڑی تعداد بھی دلچسپی لے رہی ہیں۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ EPA

دفاعی ساز و سامان کے سٹالز پر مختلف ہتھیار خواتین کی توجہ کا مرکز رہے۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ EPA

پاکستان کا محکمہ دفاع اور دفاعی پیداوار کے ادارے 2000 سے اس بین الاقوامی نمائش انعقاد کر رہے ہیں۔ یہ نمائش ہر دو سال کے بعد منعقد کی جاتی ہے، صرف 2010 میں سیلاب کے باعث اس کو موخر کردیا گیا تھا جس کے بعد اس کا تسلسل برقرار رکھا گیا ہے۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ EPA

اس دفاعی نمائش کے پہلے سال صرف 15 ممالک کی کمپنیوں نے شرکت کی تھی، وقت کے ساتھ ساتھ اس میں اضافہ ہوتا گیا اور رواں سال 50 ممالک کی 500 کے قریب کمپنیاں اپنی مصنوعات کی نمائش کر رہی ہیں۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ EPA

یہ نمائش تین سے چار روز تک جاری رہتی ہے جس کی سکیورٹی کے باعث شہر میں ٹریفک کی روانی بھی متاثر ہوتی ہے۔ نمائش کا ایک دن عام شہریوں کے لیے مختص کیا جاتا ہے۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ EPA

اس برس نمائش میں 50 ممالک کے اداروں اور کمپنیوں نے فضائی، برّی اور بحری دفاعی ساز و سامان جن میں لڑاکا طیارے، ہیلی کاپٹرز، ٹینک، آبدوز، چھوٹے ہتھیار، میزائل، ڈرونز کے ساتھ جدید دفاعی مواصلاتی سامان نمائش کے لیے پیش کیا ہے

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پاکستان دنیا کے 32 ممالک کو دفاعی ساز و سامان فروخت کرتا ہے، جن میں سری لنکا، عرب ریاستوں کے علاوہ افریقہ کے ممالک شامل ہیں۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ EPA

محکمہ دفاعی پیداوار کے مطابق گذشتہ دو برسوں سے نئی منڈیاں تلاش کی جا رہی ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ عالمی دفاعی نمائش اس میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

عالمی نمائش میں متعدد نجی کمپنیاں بھی اپنی مصنوعات کی نمائش کرتی ہیں، جن میں زیادہ تر مواصلاتی نظام وغیرہ شامل ہوتے ہیں

آئیڈیاز 2018 تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

اس نمائش میں ماہرین اور شہریوں کو جدید اسلحے اور جنگی جہازوں کو قریب سے دیکھنے کا موقع ملتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں