’عمران خان کرکٹ کے معاملات میں مداخلت نہیں کرتے‘

احسان مانی تصویر کے کاپی رائٹ PCB
Image caption احسان مانی نے اس بات کا اعتراف کیا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ میں سیاست ہہت ہے

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے کہا کہ عمران خان کرکٹ کے امور میں قطعی کوئی مداخلت نہیں کرتے التبہ ان کی یہ شدید خواہش ہے کہ پاکستان میں کرکٹ کو سیاست سے بالکل پاک اور ملکی کرکٹ کا نظام کا معیار بلند ہونا چاہیے۔

احسان مانی نے اس تاثر کو رد کیا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان جو سنہ انیس سو بانوے میں کرکٹ ورلڈ کی فاتح پاکستان ٹیم کے کپتان تھے قومی کرکٹ ٹیم کے معاملات میں مداخلت کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے:

’کرکٹ کھیلنے کے لیے انڈیا کی منتیں نہیں کروں گا‘

سرفراز پہلے بھی ہمارے کپتان تھے اور رہیں گے: احسان مانی

احسان مانی نے لاہور میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے اس بات کا اعتراف کیا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ میں بہت سیاست ہے اور اس کے کلچر اور طریقہ کار کو تبدیل کرنے میں وقت لگے گا۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے سرپرستِ اعلیٰ کی حیثیت سے احسان مانی کو نجم سیٹھی کی جگہ کرکٹ بورڈ کا چیئرمین مقرر کیا تھا۔

احسان مانی کا مزید کہنا تھا کہ ’مجھے قومی کرکٹ کے ڈھانچے میں بہتری پیدا کرنے اور چیزوں ربطہ پیدا کرنے کا جو کام سونپا گیا اس کا مقصد یہ ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ دنیا بھر کے بورڈز میں ایک مثالی ادارہ بن جائے۔‘

احسان مانی اس تاثر کو رد کیا کہ عمران خان کے دباؤ کی وجہ سے پی سی بی ملکی کرکٹ کے نئے ڈھانچے میں محکمہ جاتی کرکٹ کے کردار کو ختم کر رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ 'ہم مختلف اداروں کی ٹیموں کا کردار ختم نہیں کر رہے کیونکہ ان کا پاکستان کی کرکٹ میں اہم کردار ہے بلکہ ہم کوشش یہ کر رہے ہیں کہ ہماری مقامی یا ملکی کرکٹ کا معیار بلند ہو۔'

چیئرمین پی سی بی کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان کی خواہش ہے کہ پاکستان کی کرکٹ ٹیم ایک ایسی ٹیم بنے جس میں مسلسل میچ جیتنے کی صلاحیت اور اہلیت ہو اور ملک کی کرکٹ کا ڈھانچہ ایسا ہو جس کی بین الاقوامی سطح پر مثال دی جائے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں