’ہمارے گھر کا کوئی وارث نہیں‘
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’چھوٹا بیٹا اپنے بچے کو اٹھا کر بھاگا تھا کہ گولہ گرا‘

پاکستان اور انڈیا کے درمیان محض جھڑپیں کئی زندگیاں تباہ کر دیتی ہیں۔ سنہ 2015 میں ایسی ہی ایک جھڑپ کے دوران سیالکوٹ میں واقع سرحدی گاؤں کندن پور کی رہائشی مسرت بی بی کے دو بیٹے اور ایک پوتا ان گھر پر مارٹر گولہ گرنے سے ہلاک ہو گئے تھے۔ ان کی ایک بہو زخمی ہوئیں، جو ایک سال بعد چل بسیں۔ مرنے والوں نے ایک بیوہ اور چار بچے پیچھے چھوڑے۔ مسرت بی بی کی زندگی محض ایک ہی دن میں کیسے بدل گئی دیکھیے نامہ نگار عمر دراز کی ڈیجیٹل ویڈیو۔