وعدہ وفا ہو ہی گیا، منصوبے کے اعلان کے 14 سال بعد گوادر ایئر پورٹ کا سنگ بنیاد رکھ دیا گیا

گوادر تصویر کے کاپی رائٹ Govt Of Balochistan
Image caption اس منصوبے کی تکمیل سے گوادر میں اے 380 جیسے بڑے طیارے اتر سکیں گے

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر میں بالاآخر اعلان کے 14سال بعد بین الاقوامی ایئرپورٹ کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔

اس منصوبے کااعلان ملک کے سابق وزیر اعظم شوکت عزیز نے 19 اگست 2005 کو کیا تھا اور عمران خان سے پہلے چھ وزرائے اعظم اس ایئرپورٹ کی تعمیر، تکمیل کے بارے میں مختلف تاریخیں یا تکمیل کے دورانیے کے بارے میں دعوے کر چکے ہیں۔

سنگ بنیاد کی تقریب میں وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان، پاکستان فوج کے سربراہ جنرل قمر باجوہ اورپاکستان میں چین کے سفیر زیاؤ جنگ بھی موجود تھے۔

اس منصوبے کی تکمیل سے گوادر میں اے 380 جیسے بڑے طیارے اتر سکیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

ایئرپورٹ جس کا سنگ بنیاد رکھنے میں 14 سال لگ گئے

گوادر کے ماہی گیر

گوادر کی تاریخ پر ایک نظر

’اس ترقی سے گوادر کے لوگوں کو کیا ملے گا‘

بنیادی حقوق کی فراہمی میں عار کیا؟

نامہ نگار محمد کاظم کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں چین کے سفیر اور چین کی حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ چینی حکومت نے گرانٹ دی ہے جس سے یہ بین الاقوامی ایئر پورٹ مکمل ہوجائے گا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ گوادر پاکستان کی ترقی کا انجن ثابت ہوگا۔

گوادر کے مشرقی ساحل پر ایسٹ بے ایکسپریس وے پر تحفظات کے باعث ماہی گیر احتجاج پر ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے اس موقع پر کہا کہ ماہی گیروں کے خواہشات کے مطابق ان کی کشتیوں کی آمد و رفت کے لیے گزرگاہیں بنائی جائیں گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Govt Of Baluchistan
Image caption ماہی گیروں کے خواہشات کے مطابق ان کی کشتیوں کی آمد و رفت کے لیے گزرگاہیں بنائی جائیں گی

وزیر اعظم عمران خان کے دورہ گوادر اور وہاں دوروزہ بین الاقوامی ایکسپو کی مناسبت سے سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

سیکورٹی کے سخت انتظامات کے پیش نظر گوادر شہر میں دو روز کے لیے تمام سرکاری اور نجی اسکولوں کو بند کیا گیا تھا۔

قبل ازیں وزیر اعظم نے بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کا دورہ کیا۔

انھوں نیکوئٹہ چھاؤنی میں متحدہ عرب امارات کی تعاون سے صوبے کے پہلے امراض قلب کے ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھ دیا جو کہ متحدہ عرب امارات کے تعاون سے تعمیر کیا جارہا ہے۔

وزیر اعظم نے متحدہ عرب امارات سے تعاون کے حصول پر فوج کے سربراہ جنرل قمر باجوہ کا شکریہ ادا کیا۔

خیال رہے کہ سخت سیکورٹی کے باعث لوگوں کی آمد ورفت میں مشکلات کے باعث حزب اختلاف کی جماعتوں کی جانب سے چھاؤنی میں اس ہسپتال کے قیام کی مخالفت کی گئی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Govt Of Baluchistan
Image caption وزیر اعظم نے کہا کہ اب سیاسی مفاد سے بالاتر ہوکر پاکستان کی ہمہ گیر ترقی کے لیے اقدامات کیے جائیں گے

وزیر اعظم نے اس موقع پر کوئٹہ ژوب ڈوئل کیرج وے منصوبے کا بھی افتتاح کیا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ماضی میں الیکشن میں کامیابی کے لیے بلوچستان کی ترقی کی بات کی جاتی تھی لیکن اب ایسا نہیں ہوگا بلکہ سیاسی مفاد سے بالاتر ہوکر پاکستان کی ہمہ گیر ترقی کے لیے اقدامات کیے جائیں گے۔

عمران خان نے اس موقع پر ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے بلوچستان کے خدشات کا خصوصیت کے ساتھ ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہاں کے لوگوں کو یہ خدشہ کہ کہیں وہ اقلیت میں تبدیل نہ ہوجائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ان خدشات کو دور کرنے کے لیے یہاں کے لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ہنر مند بنانے کی ضرورت ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں