جنھیں معاشرہ پناہ دینے کو تیار نہیں
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’میں سپیشل بچوں میں اپنے بہن بھائیوں کو دیکھتا ہوں‘

پاکستان میں سرکاری اعداد و شمار کے مطابق معذور افراد کی تعداد تقریبا 10 لاکھ جبکہ غیرسرکاری اندازے کے مطابق یہ کم از کم 30 لاکھ ہے جس میں 43 فیصد بچے ہیں۔

ان افراد کے لیے خاص طور پر سرکاری سطح پر سہولیات اور فلاحی سکیمیں نہ ہونے کے برابر ہیں۔ پنجاب کی تحصیل کھاریاں میں مدثر حسین شاہ نے ایسے بچوں کے لیے جدید طرز پر ٹرسٹ قائم کیا ہے، وہ کہتے ہیں کہ وہ یہاں ان بچوں کو پناہ دیتے ہیں جنھیں معاشرہ پناہ دینے کو تیار نہیں۔ دیکھیے فرحت جاوید کی ڈیجیٹل ویڈیو۔

متعلقہ عنوانات