پاکستان کا یوم آزادی: مستونگ میں ریلی کے نزدیک بم دھماکہ، پولیس اہلکار سمیت تین افراد زخمی

مستونگ تصویر کے کاپی رائٹ courtesy munir shahwani

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقے مستونگ میں یوم آزادی کی مناسبت سے نکالی گئی ریلی کی سکیورٹی پر تعینات دو پولیس اہلکاروں سمیت تین افراد بم دھماکے میں زخمی ہوگئے ہیں۔

یہ دھماکہ اُس وقت ہوا جب ریلی مستونگ سے کوئٹہ کی جانب بڑھ رہی تھی۔ پولیس اہلکار نے بتایا کہ نامعلوم افراد نے سڑک کے کنارے دھماکہ خیز مواد نصب کر رکھا تھا۔

جب ریلی کی سکیورٹی پر مامور ایس ایچ او مستونگ پولیس کی گاڑی پشکرم کے مقام پر پہنچی تو بم پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ایس ایچ او خود تو محفوظ رہے تاہم دو پولیس اہلکاروں سمیت تین افراد زخمی ہوگئے۔

زخمی اہلکاروں کو علاج کے لیے مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

کوئٹہ میں بم دھماکہ، دو پولیس اہلکار ہلاک

کوئٹہ کے لیاقت بازار میں دھماکہ، چار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ courtesy munir shahwani

مستونگ پولیس کے ایک اہلکار نے فون پر بی بی سی کو بتایا کہ یہ ریلی بلوچستان میں حکمراں جماعت بلوچستان عوامی پارٹی کے زیر اہتمام کوئٹہ کی جانب جارہی تھی۔

اس ریلی کے شرکا نے کوئٹہ میں ہاکی چوک پر 14 اگست کی مناسبت سے ایک جلسے میں شرکت کرنی تھی۔ جلسے کا انعقاد بھی صوبائی حکومت نے کیا تھا۔

مستونگ کوئٹہ سے متصل ضلع ہے جس کا ہیڈکوارٹر کوئٹہ شہر سے اندازاً 45 کلو میٹر کے فاصلے پر جنوب میں واقع ہے۔

چار روز کے دوران اس علاقے میں یہ دوسرا دھماکہ تھا۔ اس سے قبل اسی علاقے میں کوئٹہ اور ایران کے درمیان ریلوے ٹریک کو نقصان پہنچایا گیا تھا۔

بلوچستان میں حالات کی خرابی کے بعد سے اس علاقے میں بھی بدامنی کے واقعات پیش آرہے ہیں تاہم سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ پہلے کے مقابلے میں حالات میں بہتری آئی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں