آصف علی زرداری کا طبی معائنہ، ڈاکٹروں کی فوری ہسپتال منتقل کرنے کی تجویز

آصف علی زرداری تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

اڈیالہ جیل میں قید سابق پاکستانی صدر آصف علی زرداری کا بدھ کو جیل میں طبی معائنہ کرنے والی ڈاکٹروں کی ٹیم نے انھیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کرنے کی تجویز دی ہے۔

پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز ہسپتال) کے سینیئر ڈاکٹروں پر مشتمل اس ٹیم نے وزارتِ داخلہ کی درخواست پر پیپلز پارٹی کے شریک سربراہ کا جیل میں ابتدائی طبی معائنہ کیا ہے۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق میڈیکل بورڈ کو بتایا گیا تھا جیل میں آصف زرداری کی طبیعت ناساز ہے جس کی وجہ سے ایک میڈیکل سپیشلسٹ، دل کے امراض کے ماہر، کمر درد کے ماہر اور بعض دیگر ماہرین پر مشتمل ٹیم نے آصف زرداری کا معائنہ کیا۔

یہ بھی پڑھیے

زرداری کا جیل سے رومانس

جعلی اکاونٹس کیس: زرداری کی درخواستیں مسترد

’سلیکٹڈ حکومت صرف سلیکٹڈ آوازیں سننا چاہتی ہے‘

زرداری، بحریہ گروپ کی جائیداد کی منتقلی پر پابندی

ہسپتال ذرائع کے مطابق ڈاکٹروں کی ٹیم نے بتایا ہے کہ سابق صدر کی کمر اور اعصاب کی تکلیف بہت شدت اختیار کر گئی ہے اور انھیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کر کے ان کی ایم آر آئی اور دیگر ٹیسٹ کروانے کی ضرورت ہے تاکہ ان کا علاج شروع کیا جا سکے۔

ڈاکٹروں کے مطابق آصف زرداری کی کمر اور گردن کے پٹھوں میں شدید اکڑاؤ ہے جو مزید پیچیدگیوں کا سبب بن سکتا ہے۔ اس کے علاوہ انھیں لاحق ذیابیطس کا مرض بھی پیچیدگیاں پیدا کر رہا ہے جس کی وجہ سے انھیں ہر وقت طبی نگرانی اور علاج کی ضرورت ہے جو صرف ہسپتال ہی میں فراہم کیا جا سکتا ہے۔

'راولپنڈی کا موسم'

آصف زرداری کے جیل میں ہونے والے طبی معائنے کے دوران وہاں موجود ایک سرکاری اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ جیل میں آصف زرداری کو وہی کمرہ دیا گیا ہے جس میں سابق وزیراعظم پاکستان نواز شریف کو رکھا گیا تھا لیکن اس کمرے سے ائیرکنڈیشنر اتار لیا گیا ہے۔

طبی معائنے کے دوران جب اس بات کا تذکرہ ہوا تو آصف زرداری نے بہت ذومعنی انداز میں کہا کہ انھیں ائیرکنڈشنر کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ 'ایک دو مہینے میں راولپنڈی کا موسم بدلنے والا ہے۔ '

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

ان کے اس جملے سے کمرے میں قہقہہ بلند ہوا جو ڈاکٹروں، جیل عملے اور سکیورٹی اہلکاروں سے بھرا ہوا تھا۔

اہلکار کے مطابق کمرے میں موجود بعض افراد نے اس جملے کو بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع پر ایک سیاسی تبصرے کے طور پر لیا۔

میڈیکل بورڈ کی جانب سے آصف زرداری کو ہسپتال منتقل کرنے کی رپورٹ جمعرات کو وزارت داخلہ کے سپرد کی جا رہی ہے جو اس پر حتمی فیصلہ کرنے کی مجاز اتھارٹی ہے۔

یاد رہے کہ سابق صدر آصف زرداری کے خلاف منی لانڈرنگ اور بد عنوانی کے مقدمات کی سماعت احتساب عدالت میں جاری ہے اور اس دوران انھیں نیب کی درخواست پر جیل میں رکھا گیا ہے۔

اسی بارے میں