پی آئی اے نے دوران پرواز ٹک ٹاک ویڈیوز بنانے والی فضائی میزبانوں کو وارننگ جاری کر دی

پی آئی اے تصویر کے کاپی رائٹ SM Viral Post
Image caption ویڈیوز میں دونوں خواتین مختلف ڈائلاگ یا گانوں پر ٹِک ٹاک کی ویڈیوز بناتی نظر آتی ہیں

پاکستان کی قومی فضائی کمپنی پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز نے اپنی دو فضائی میزبانوں کو سوشل میڈیا پر ٹک ٹاک ویڈیو شیئر کرنے پر وارننگ جاری کی ہے۔

ان ویڈیوز میں دونوں خواتین مختلف ڈائلاگ یا گانوں پر ٹِک ٹاک کی ویڈیوز بناتی نظر آتی ہیں۔ ایک ویڈیو میں وہ ایئرپورٹ پر موجود ہیں جبکہ ایک ویڈیو دورانِ پرواز بنائی گئی ہے۔

پی آئی اے کے ترجمان مشہود تاجور نے کہا کہ 'ان دونوں کیبن کرو کو وارننگ جاری کی گئی ہے جس کی بنیاد یونیفارم اور دورانِ ڈیوٹی نامناسب طرزِ عمل اختیار کرنا ہے'۔

یہ بھی پڑھیے

پی آئی اے: طیارے کو مانچسٹر میں کیا ہوا؟

پی آئی اے، کیکی چیلنج اور نیب

ایوا زوبیک پاکستان میں کیا کر رہی ہیں؟

پی آئی اے کی ایک سینئیر اہلکار نے نام نہ بتانے کی شرط پر بتایا کہ یہ خواتین پی آئی اے میں اپنا کریئر کا آغاز کر رہی ہیں اور ان کے خلاف کوئی اور شکایات نھیں ہے اس لیے انھیں صرف وارننگ دی گئی ہے ورنہ معطل کیا جاتا۔

تصویر کے کاپی رائٹ PIA
Image caption اس سے قبل نیب نے وی لاگر ایوا زو بیک کی جانب سے پاکستانی پرچم میں ملی نغمے پر ڈانس کرنے والی ایک ویڈیو پر نوٹس لیا تھا

یاد رہے کہ اس سے قبل نیب کے چیئرمین نے وی لاگر ایوا زو بیک کی جانب سے پاکستانی پرچم میں ملی نغمے پر ڈانس کرنے والی ایک ویڈیو پر نوٹس لیا تھا اور اس کے حوالے سے پی آئی اے کے چند اہلکار اب تک پیشیاں بھگت رہے ہیں۔

دوسری جانب پی آئی اے کے لیے کام کرنے والے ایک اہلکار نے بتایا کہ 'یہ بے ضرر ویڈیوز ہیں، بہت ہی فنکی اور مزاحیہ۔ مگر بدقسمتی سے ہم اس قسم کی ایئرلائن نھیں ہیں جس میں اس قسم کے فنک یا مزاح کو سمجھا جائے یا سراہا جائے۔ اگر یہی ایمرٹس یا لفتھانسا ہوتی تو یہ چل جاتا۔'

جب ان سے پوچھا گیا کہ ویڈیو میں ایک مرد بھی موجود ہے جو ایک پیکٹ آگے بڑھا رہے ہیں تو انھوں نے کہا کہ ’مردوں کو کون دیکھتا ہے۔ ڈیکورم اور اس قسم کی باتوں کا خیال تو خواتین کو رکھنا چاہے۔‘

اسی بارے میں