پاکستان بمقابلہ سری لنکا: ٹی ٹوئنٹی سیریز میں پاکستان کو تیسرے میچ میں بھی شکست

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption حارث سہیل نے نصف سنچری سکور کی

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ٹی ٹوئنٹی سیریز کے تیسرے اور آخری میچ میں سری لنکا نے پاکستان کو ہرا کر سیریز تین صفر سے جیت لی ہے۔

سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے پاکستان کو جیت کے لیے 148 رنز کا ہدف دیا۔

پاکستان مقررہ بیس اووروں میں صرف 134 رنز بنا سکا اور اس طرح اسے تیرہ رنز سے شکست ہوئی۔ حارث سہیل کے علاوہ کوئی دوسرا کھلاڑی جم کر نہ کھیل سکا۔

پاکستان نے جب ہدف کا تعاقب شروع کیا تو اس کو پہلی گیند پر نقصان اٹھانا۔ پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی فخر زمان تھے۔ بابر اعظم اور حارث سہیل نے پاکستان کا سکور 76 رنز تک پہنچا دیا۔

بابر اعظم کے آؤٹ ہونے کے بعد کپتان سرفراز احمد کریز پر آئے جس کے بعد رنز بنانے کی رفتار ماند پڑ گئی۔

حارث سہیل تیز سکور کرنےکی کوشش میں 52 رنز بنا کرآؤٹ ہوئے تو اس کے بعد پاکستان کا کوئی کھلاڑی جم کر نہ کھیل سکا اور یکے بعد دیگرے وکٹیں گرتی رہیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اس سے پہلے سری لنکا کی جانب سے اوشادا فرنینڈو نے تین چھکو ں اور چار چوکوں کی مدد سے 78 رنز کی شاندار اننگز کھیل اپنی ٹیم کی پوزیشن مستحکم کی ہے۔ فرنینڈو کے علاوہ سری لنکا کا کوئی دوسرا کھلاڑی 13 کے انفرادی سکور سے آگر نہیں بڑھ سکا۔ پاکستان کی جانب محمد عامر نے تین وکٹیں حاصل کیں۔

سری لنکا کی جانب سے دانشکا گوناتیلاکا اور سدیرا سماراوکرما نے اننگز کا آغاز کیا۔

تیسرے اوور کی آخری گیند پر محمد عامر نے دانشکا گوناتیلاکا کو بولڈ کر دیا۔ انھوں نے آٹھ رنز بنائے تھے۔ اس سے اگلے ہی اوور میں عماد وسیم کی گیند پر سدیرا سماراوکرما آٹھ رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

پانچویں اوور میں محمد عامر نے اپنی دوسری وکٹ اس وقت لی جب بھانوکا راجہ پاکسا ان کی گیند پر سکوئر لیگ باؤنڈری پر آصف علی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

آٹھویں اوور کی آخری گیند پر اینجلو پریرا رن آؤٹ ہوگئے۔ انھوں نے 13 رنز بنائے تھے۔

تاہم اس کے بعد داسن شاناکا اور اوشادا نے 76 رنز کی اہم شراکت کی اور سری لنکا کی ٹیم کو ایک مستحکم پوزیشن پر لے گئے۔

داسن شاناکا نے 25 گیندوں پر 12 رنز بنائے اور وہ وہاب ریاض کی گیند پر فخر زمان کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

سری لنکا سیریز کے پہلے دونوں میچ جیت کر سیریز اپنے نام کر چکا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

آج کے میچ کے لیے سری لنکا نے پانچ تبدیلیاں کیں ہیں۔ جبکہ پاکستان کی جانب سے تین تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ احمد شہزاد، عمر اکمل، اور محمد حسنین کی جگہ حارث سہیل، افتخار احمد، اور عثمان شنواری کو شامل کیا گیا ہے۔

پہلے میچ میں ٹی ٹوئنٹی کی رینکنگ میں سرفہرست ٹیم پاکستان اس رینکنگ کی آٹھویں نمبر کی ٹیم سری لنکا سے ہاری تو پاکستان میں بہت تنقید کی گئی۔ پاکستان کے نئے مینیجر مصباح الحق کے دو سینیئر کھلاڑیوں احمد شہزاد اور عمر اکمل کو ٹیم میں شامل کرنے کا فیصلہ پاکستان کو انتہائی مہنگا پڑا تھا۔ دونوں کھلاڑیوں کو ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی پر ٹیم میں دوبارہ جگہ دی گئی تھی لیکن دونوں نے ایک مرتبہ پھر کرکٹ شائقین کو مایوس کیا۔

دوسرے میچ میں بھی پاکستان کی بیٹنگ لائن ایک مرتبہ پھر بری طرح ناکام رہی اور عماد وسیم کے علاوہ کوئی بھی بڑا سکور نہ کر سکا۔ صرف کپتان سرفراز احمد، آصف علی اور احمد شہزاد ہی تھے جو ڈبل فگرز میں گئے جبکہ باقی پوری ٹیم میں کوئی بھی سات سے زیادہ رنز نہیں بنا سکا۔ سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلتے ہوئے 182 رنز بنائے اور پاکستان کی پوری ٹیم صرف 147 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں