بلوچستان میں انار کی بھرمار: پاکستان میں یہ پھل کہاں سے آتا ہے؟

انار

’ایک انار سو بیمار‘ کی مثال تو ہم سب نے ہی سنی ہے۔ لیکن اس موسم میں پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں انار کی اتنی وافر مقدار موجود ہے کہ اگر ’سو انار سو بیمار‘ کہا جائے تو شاید غلط نہ ہوگا۔

ممکن ہے کہ ’ایک انار سو بیمار‘ کی مثال اس وقت عام ہوئی ہو گی کہ جب انار کم اور بیمار (یا اس کے طلب گار) زیادہ ہوں گے۔ تاہم دسمبر کے اس سرد موسم کے دوران ملک کی تقریباً ہر مارکیٹ میں انار پہنچ جاتے ہیں۔

انار

بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں تو انار کچھ زیادہ نظر آتے ہیں۔ انھیں یہاں شہر کے علاوہ ملک بھر میں بیچا جاتا ہے۔ لیکن کوئٹہ کی مارکیٹوں میں ان کے ڈھیر لگے رہتے ہیں۔

پاکستان کے اکثر علاقوں میں یہ تاثر عام ہے کہ یہ کھٹا میٹھا پھل بلوچستان سے آتا ہے۔ ’چمن کا انار‘ ملک بھر میں اپنا مقام رکھتا ہے۔ لیکن کیا یہ تاثر درست ہے؟

یہ بھی پڑھیے

’انار افغانستان کی مشکلات کا حل بن سکتا ہے‘

ٹماٹر لاہور میں تین سو روپے امرتسر میں بیس روپے فی کلو

وہ صحت بخش غذا جو ہماری خوراک کا حصہ نہیں رہی

ایک سال تک نہ خراب ہونے والا سیب امریکہ میں دستیاب

انار

پاکستان میں اتنے انار کہاں سے آتے ہیں؟

یہ تاثر کافی حد تک درست نہیں کہ انار بلوچستان میں کاشت کیے جاتے ہیں۔ جو انار کوئٹہ سے پاکستان کے دیگر شہروں میں جاتے ہیں وہ زیادہ تر افغانستان سے آتے ہیں۔

یہ انار افغانستان کے صوبہ قندہار سے آتے ہیں جہاں انار کے بڑے باغات ہیں۔ حتیٰ کہ یہ باغات قندہار شہر کے گرد و نواح میں بھی کئی کلو میٹر پر پھیلے ہوئے ہیں۔

انار

اچھی قیمت کے لیے افغان کاشتکار انار کی پیداوار کا ایک بڑا حصہ سرحدی شہر چمن کے راستے پاکستان بھیجتے ہیں۔

بلوچستان میں زمیندار ایکشن کمیٹی کے سیکریٹری جنرل حاجی عبد الرحمان بازئی نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ اس وقت یہاں جو انار دستیاب ہیں ان کا دو تہائی حصہ قندہار سے آیا ہے۔

انار

ان کا کہنا ہے کہ اب پانی کی قلت کے باعث بلوچستان میں بھی لوگ سیب کے باغات کی جگہ انار کے باغات لگا رہے ہیں جس کے باعث اب بلوچستان میں بھی انار کی پیداوار میں اضافہ ہو رہا ہے۔

زمیندار ایکشن کمیٹی کے رہنما کے مطابق قندہار میں انار کی کاشت نہری پانی سے کی جاتی ہے جبکہ قندہار کا ماحول انار کے باغات کے لیے زیادہ مناسب ہے۔ اس لیے قندہاری انار کی کوالٹی زیادہ بہتر ہوتی ہے۔

انار

یہ انار نہ صرف دیکھنے میں جاذبِ نظر ہیں بلکہ مٹھاس میں بھی اپنی مثال آپ ہیں۔

انار کی کئی اقسام ہیں لیکن انار فروخت کرنے والوں کا کہنا ہے کہ ان میں کاغذی، سرخ اور بے دانہ زیادہ مشہور ہیں۔

بے دانہ انار وہ ہے جس کے دانے میں گُٹلی نہیں ہوتی۔

انار

۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں