منور حسن جماعتِ اسلامی کے نئے امیر

Image caption سید منور حسن کا تعلق کراچی سے ہے

جماعت اسلامی پاکستان کے رہنما سید منور حسن پانچ برس کے لیے جماعت کے نئے امیر منتخب ہوگئے ہیں۔

سید منور حسن جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل ہیں اور اب وہ اپریل کے پہلے ہفتے میں جماعت اسلامی کے چوتھے امیر کا حلف اٹھائیں گے۔

جماعت اسلامی کے رہنما اور انتخابی عمل کے رکن فرید احمد پراچہ کے مطابق نئے امیر کے انتحاب میں سید منور حسن کو ان کے مدمقابلہ امیدواروں کی نسبت زیادہ ووٹ ملے ہیں اور اس طرح منور حسن کو پانچ برس کے لیے جماعت اسلامی کا نیا امیر چن لیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نئے امیر جماعت اسلامی کے لیے جو انتخاب کا عمل شروع کیا گیا تھا وہ تقریبا تین ماہ میں مکمل ہوا ہے اور نئے امیر کے چناؤ کے لیے نوے فیصد سے زائد ووٹ ڈالے گئے ہیں۔

جماعت اسلامی کے امیر کے لیے ہر پانچ سال بعد چناؤ ہوتا ہے اور اس مربتہ تیئس ہزار سے زائد ارکان جماعت اسلامی نے نئے امیر کے انتخاب کے لیے ووٹ ڈالے۔امیر کے انتخاب کے لیے سید منور حسن ، لیاقت بلوچ اور سراج الحق کے درمیان مقابلہ ہوا جبکہ جماعت کے سبکدوش ہونے والے امیر قاضی حسین نے اس انتخاب میں حصہ لینے سے معذرت کر لی تھی۔

جماعت اسلامی قیامِ پاکستان سے پہلے چھبیس اگست انیس سو اکتالیس کو وجود میں آئی تھی۔ جماعت اسلامی کے قیام سے لے کر اب تک تین امیر منتخب ہوئے ہیں جن میں سید ابو الاعلیْ مودودی، میاں محمد طفیل اور قاضی حسین احمد شامل ہیں۔ جماعت کے بانی مولانا مودودی تھے جو انیس سو بہتر تک امیر کے عہدے پر فائز رہے اور ان کے بعد ان کی جگہ میاں طفیل کو جماعت کا نیا امیر چن لیا گیا تھا جو سنہ انیس سو ستاسی تک امیر جماعت اسلامی رہے۔

Image caption منور حسن جماعتِ اسلام کی تاریخ کے چوتھے امیر ہیں

میاں طفیل کے بعد یہ عہدہ قاضی حسین احمد کے پاس آیا۔ سنہ انیس سو ترانوے میں جماعت اسلامی کی عام انتخابات میں شکست کی وجہ سے قاضی حسین احمد نے انیس سو چورانوے میں اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئے تاہم امیر کے لیے ہونے والے چناؤ میں انہیں دوبارہ امیر منتخب کر لیا گیا۔

سید منور حسن کا کراچی سے تعلق ہے اور جماعت اسلامی میں شامل سے ہونے سے پہلے وہ بائیں بازو کی طلبہ تنظیم نیشنلسٹ سوڈنٹس آرگنائشن کے رہنما تھے تاہم انہوں نے سنہ انیس ساٹھ میں جماعت اسلامی میں شمولیت اختیار کرلی۔سید منور حسن جماعت اسلامی کے طلبہ ونگ اسلامی جمیت طلبہ کے ناظم اعلیْ بھی رہے ہیں۔

سید منور حسن کے امیر منتخب ہونے سے جماعت کے سیکرٹری جنرل کا عہدہ بھی خالی ہوگیا ہے اس لیے جماعت کے امیر کا حلف اٹھانے کے بعد وہ مجلس شوریْ کی مشاورت سے نیا سیکرٹری جنرل نامزد کریں گے۔ خیال رہے کہ قاضی حسین احمد لگ بھگ بائیس برس تک امیر رہنے کے بعد اپریل میں اپنے عہدے سے سبکدوش ہورہے ہیں۔