پشاور:تین سکولوں پر بارودی مواد سے حملے

صوبہ سرحد کے دارالحکومت پشاور میں پولیس کے مطابق تین سرکاری سکولوں پر بارودی مواد سے حملے ہوئے ہیں جس کے نتیجے میں تینوں سکولوں کو کافی نقصان پہنچا ہے۔

فائل فوٹو

پشاور میں پولیس اہلکار آختر منیر نے بی بی سی کو بتایا کہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب مسلح افراد نے شہر کے قریب لنڈی آرباب اور ریگی باچا گڑھی میں لڑکوں کے دوسکولوں کو دھماکہ خیز مواد سے نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ دھماکوں سےدونوں سکولوں کی عمارتوں کو کافی نقصان پہنچا ہے۔

ہمارے نامہ نگار دلاور خان وزیر نے بتایا کہ ایک اور پولیس اہلکار نے بتایا کہ ریگی باچا گڑھی میں سکول پر راکٹ سے حملہ ہوا ہے جس سے سکول کا ایک حصہ مکمل طور پر گر گیا ہے۔ پولیس اہلکار کا کہنا تھا علاقے میں پولیس کی بھاری نفری پہنچ گئی ہے اور قریبی علاقے میں شدت پسندوں کی تلاش جاری ہے لیکن تاحال کسی قسم کی گرفتاری کی اطلاع نہیں ملی ہے۔

خیال رہے کہ قبائلی علاقوں کے بعد پشاور میں سکولوں پر حملوں کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے

دریں اثناء پشاور کے نواحی علاقے پشتہ خرہ میں بھی مسلح افراد نےایک سرکاری سکول کو بم دھماکے سے اُڑا دیا ہے۔ پولیس کے مطابق دھماکے سے سکول کی چاردیواری مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہے۔

خیال رہے کہ قبائلی علاقوں میں تو گزشتہ کچھ عرصہ سے سکولوں اور دیگر سرکاری عمارات پر حملوں کا سلسلہ جاری ہے لیکن اب پشاور میں بھی سکولوں پر حملوں میں اضافہ ہوا ہے۔

یہ واقعات ایسے وقت پیش آرہے ہیں جب پشاور میں امریکی قونصلیٹ پر حملے کے بعد پورے پشاور میں سکیورٹی کے انتظامات سخت کردیے گئے ہیں۔

اسی بارے میں