رانا نوید نے اپیل دائر کردی

پاکستان کے کرکڑ رانانوید الحسن نے پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے ایک سالہ پابندی کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کردی ہے۔

فائل فوٹو
Image caption رانا نوید کی غیرموجودگی میں اُن کے وکیل عمران عزیز قریشی اپیل کی سماعت میں اُن کی طرف سے پیش ہونگے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل رانا نوید نے اپنے وکیل عمران قریشی کے توسط سے پاکستان کرکٹ بورڈ کو قانونی نوٹس بھیجا تھا جس پر اُن سے کہا گیا تھا کہ وہ قواعد وضوابط کے مطابق اپیل کرسکتے ہیں جس کے بعد انہوں نے باضابطہ طور پر اپیل دائر کردی ہے۔

رانانویدالحسن نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’ان پر پابندی کی وجہ یہ بتائی گئی ہے کہ آسٹریلیا کے خلاف ٹوئنٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں اُن کی کارکردگی اچھی نہیں تھی۔‘

ہمارے نامہ نگار عبدالرشید شکور نے بتایا کہ رانا نوید کے مطابق اُن کا جرم اتنا بڑا نہیں کہ صرف ایک میچ کی کارکردگی کی بنا پر یہ پابندی عائد کی جائے۔ دنیا کا کوئی بھی کھلاڑی ہر میچ میں اچھی کارکردگی نہیں دکھاسکتا اور نہ ہی ٹیم کوجتواسکتا ہے۔

رانانوید الحسن نے کہا ’اس فیصلے سے انہیں یقیناً پریشانی ہوئی لیکن انہیں امید ہے کہ وہ جلد ہی دوبارہ پاکستان کےلئے کھیل سکیں گے۔‘

یاد رہے کہ بتیس سالہ رانا نوید الحسن نو ٹیسٹ، چوہتر ون ڈے اور چار ٹی ٹوئنٹی میچز میں پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں اور وہ آئندہ چند روز میں انگلش کاؤنٹی سسیکس کی طرف سے کھیلنے کے لئے انگلینڈ روانہ ہورہے ہیں ۔

رانا نے کہا کہ وہ پہلے بھی سسیکس کی طرف سے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرچکےہیں اور انہیں توقع ہے کہ اس سیزن میں بھی ان کی کارکردگی اچھی رہے گی۔ موجودہ حالات میں کاؤنٹی کھیلنا اُن کےلئے چیلنج ہے۔

رانا نوید کی غیرموجودگی میں اُن کے وکیل عمران عزیز قریشی اپیل کی سماعت میں اُن کی طرف سے پیش ہونگے۔

یاد رہے کہ رانا نوید الحسن کے علاوہ سابق کپتان شعیب ملک اور اکمل برادرز نے بھی اپنے خلاف عائد کی جانے والی پابندی اور جرمانوں کے فیصلے کے خلاف پاکستان کرکٹ بورڈ سے اپیل دائر کی ہے۔

اسی بارے میں