باردوی سرنگ کا دھماکہ، چار اہلکار ہلاک

صوبہ خیبر پختو نخواہ کے جنوبی ضلع ہنگو میں سکیورٹی فورسز کے قافلے میں شامل ایک گاڑی بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جس کے نتیجے میں چار اہلکار ہلاک جب کہ پانچ زخمی ہوگئے ہیں۔

فائل فوٹو
Image caption ضلع ہنگو قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی کے سنگم پر واقع ہے جہاں پہلے بھی سکیورٹی فورسز کے پر حملے ہوچکے ہیں

زخمیوں کو سی ایم ایچ ٹل منتقل کردیاگیا ہے۔

ایک اعلیٰ فوجی اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ منگل کی شام چھ بجے کے قریب تحصیل ٹل سے قبائلی علاقے پاڑہ چنار جانے والے قافلے میں شامل ایک گاڑی توت کس کے مقام پر ایک باردوی سرنگ سے ٹکراگئی جس کے نتیجے میں چار اہلکار ہلاک جبکہ پانچ زخمی ہوگئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ زخمیوں کو سی ایم ایچ ٹل منتقل کردیاگیا ہے۔جن میں سے بعض کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

اہلکار نے پشاور میں ہمارے نامہ نگار دلاور خان وزیر کو بتایا کہ دھماکے میں ایک گاڑی مکمل طورپر تباہ جب کہ تین گاڑیوں کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ واقعہ کے بعد سکیورٹی فورسز نے ٹل پاڑہ چنار شاہراہ کو ہر قسم کے ٹریفک کے لیے بند کردیا ہے کسی کو آنے جانے کی اجازت نہیں ہے۔اہلکار کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں افتخار حُسین،نذیر حُسین،گل حسن اور نجات حُسین شامل ہیں۔

یاد رہے کہ ضلع ہنگو قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی کے سنگم پر واقع ہے جہاں پہلے بھی سکیورٹی فورسز کے پر حملے ہوچکے ہیں جس سکیورٹی فورسز کے علاوہ عام شہری بھی نشانہ بنے ہیں۔

اسی بارے میں