آسٹریلیا سیمی فائنل میں

بریڈ ہیڈن
Image caption بریڈ ہیڈن آسٹریلیا کی طرف سے کامیاب ترین بیٹسمین رہے

آسٹریلیا کی ٹیم ویسٹ انڈیز کو چھ وکٹوں سے ہرا کے ٹی ٹوئنٹی کے سیمی فائنل میں پہنچ گئی۔

ویسٹ انڈیز کے لیے سیمی فائنل میں پہنچنے کے لیے اس میچ میں بہت بڑے مارجن سے کامیابی حاصل کرنا ضروری تھا۔ تاہم پہلے ہی اوور میں کپتان کرس گیل کی وکٹ گرنے کے بعد ویسٹ انڈیز کی ٹیم صرف ایک سو پانچ رنز ہی حاصل کر سکی۔

آسٹریلیا نے میچ ایک ایسے مرحلے پر چھ وکٹوں سے جیت لیا جب ابھی میچ کی بائیس گیندیں باقی تھی۔

ٹی ٹوئنٹی میچوں میں اب تک ناقابلِ شکست آسٹریلیا کی ٹیم سیمی فائنل میں جمعہ کے روز پاکستان کا سامنا کرے گی۔ یہ میچ جمعہ کے روز برطانیہ کے مقامی وقت کے مطابق دن ساڑھے چار بجے ہو گا۔

منگل کو ہی انڈیا کو شکست دینے والی سری لنکا کی ٹیم دوسرے سیمی فائنل میں انگلینڈ کے خلاف کھیلے گی۔ یہ سیمی فائنل جمعرات کے روز برطانوی مقامی وقت کے مطابق دن ساڑھے چار بجے ہو گا۔

اس سے پہلے ویسٹ انڈیز کے کپتان کرس گیل نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ تاہم یہ فیصلہ اس وقت غلط دکھائی دیا جب خود کرس گیل اننگز کے دوسرے ہی اوور میں نانیز کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔

ٹیم کا سکور ابھی انتالیس رنز پر ہی پہنچا تھا کہ دوسری اوپنر چندرپال بھی چوبیس رنز بنا کر مچل جانسن کی گیند پر ڈیوڈ ہسی کی ہاتھوں کیچ ہو گئے۔

بعد میں کوئی کھلاڑی بھی آسٹریلوی بولنگ کا مقابلہ نہ کر سکا اور پوری ٹیم انیس اوورز میں ایک سو پانچ رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

جواب میں آسٹریلیا نے مطلوبہ سکور بغیر کسی مشکل کے چار وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا۔

آسٹریلیا کی طرف سے بریڈ ہیڈن نے بیالیس اور وارنر نے پچیس رنز بنائے۔

اسی بارے میں