ہنزہ میں ہیلی کاپٹر سروس

اب لوگوں کی منتقلی ہیلی کاپلاروں کے بغیر ممکن نہیں رہی۔ ہنزہ کے ڈپٹی کمشنر ظفر وقار تاج نہ کہا ہے کہ بدھ سے ہنزہ میں ہیلی کاپٹر سروس شروع کی جا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ان ہیلی کاپٹروں کے ذریعے ہنزہ میں لینڈ سلائیڈنگ سے بننے والی جھیل کے ان چار گاؤں میں رہنے والے متاثرین کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا جائے گا جو خطرے میں آ سکتے ہیں۔

ڈپٹی کمشنر کے مطابق یہ چار گاؤں شکشت، گلمتھ، حسینی اور پھسو ہیں اور دریائے ہنزہ کی اپّر سٹریم پر واقع ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہیلی کاپٹروں کے ذریعے ان گاؤں میں رہنے والوں کو امدادی اشیا بھی فراہم کی جا سکیں گی۔

ان کی بتائی ہوئی تفصیلات کے مطابق اب تک ہنزہ نگر کے بارہ گاؤں کے چار ہزار چار سو پینتالیس لوگوں پر مشتمل چار سو سینتالیس خاندانوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا جا چکا ہے۔

ڈپٹی کمشنر ہنزہ نے بتایا کہ منگل کو جھیل کی سطح تین فٹ آٹھ انچ بلند ہوئی ہے اور اس ہفتے جھیل سے پانی کا اخراج شروع ہو جائے گا۔

اسی بارے میں