پاکستان میں یو ٹیوب کی سروس بحال

پاکستان میں توہین آمیز خاکوں کے مقابلے کی وجہ سے بند کی جانے والے ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یو ٹیوب کی سروس بحال کر دی گئی ہے۔

پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے گزشتہ ہفتے توہینِ آمیز مواد کی موجودگی کو جواز بنا کر یو ٹیوب اور فیس بک پر پابندی عائد کر دی تھی جبکہ وکی پیڈیا تک رسائی محدود کر دی گئی تھی۔

پی ٹی اے کے ترجمان خرم علی مہران نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ہے کہ یو ٹیوب پر عائد پابندی بدھ کی رات سے ہٹا لی گئی ہے تاہم پاکستان میں توہینِ آمیز مواد سے متعلقہ لنکس اب بھی دستیاب نہیں ہوں گے۔

اس سے قبل پاکستان کے وزیرِ داخلہ رحمان ملک نے بدھ کو کہا تھا کہ پاکستان میں یوٹیوب اور فیس بک پر عائد پابندی آئندہ چند روز میں ہٹا لی جائے گی۔

انہوں نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں لکھا تھا کہ وفاقی کابینہ نے اجلاس کے دوران ان کا یہ مشورہ قبول کر لیا ہے کہ فیس بک اور یو ٹیوب کے صرف متنازع حصوں پر پابندی عائد کی جائے۔

خیال رہے کہ جہاں یو ٹیوب پر پابندی لگانے کا فیصلہ حکومت نے اپنے طور پر کیا تھا وہیں فیس بک پر پابندی لگانے کا حکم لاہور ہائی کورٹ نے ایک مقدمے کے دوران دیا تھا اور عدالت میں اس مقدمے کی سماعت کی اگلی تاریخ اکتیس مئی ہے۔

اسی بارے میں