گلگت:تودے گرنے سے آٹھ ہلاک

پاکستان کے شمالی علاقے گلگت بلتستان میں حکام کے مطابق پہاڑی اور مٹی کے تودے گرنے کے نتیجے میں کم از کم آٹھ افراد ہلاک جبکہ نو زخمی ہوگئے ہیں۔

فائل فوٹو
Image caption حکام کے مطابق اِس واقعہ میں مرنے والے تمام افراد کی لاشیں ملبے سے نکالی جاچکی ہیں

یہ واقعہ گزشتہ رات گئے اسکردو کے یورمگت گاؤں میں پیش آیا جب لوگ گھروں میں سوئے ہوئے تھے۔

مقامی حکام کا کہنا ہے کہ اِس گاؤں کے تین درجن گھر تودے کی زد میں آگئے۔ ہلاک ہونے والوں میں بچے، خواتین اور مرد شامل ہیں۔

حکام کے مطابق اِس واقعہ میں مرنے والے تمام افراد کی لاشیں ملبے سے نکالی جا چکی ہیں اور زخمی افراد کو مقامی ہسپتال میں داخل کر دیا گیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ وہ تودوں کے باعث پہنچنے والے نقصانات کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اُن کے مطابق تودے کے باعث تیس گھر مکمل طور پر تباہ ہوئے جبکہ تین گھروں کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔

اُن کے مطابق یہ گھر مٹی اور لکڑی کے بنے ہوئے تھے اور پہاڑی علاقوں میں لوگ عمومی طور پر مٹی اور لکڑی کے گھر بناتے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ اس واقعہ میں مقامی افراد کے مال مویشی ہلاک ہوئے ہیں جبکہ اُن کی زرعی زمین بھی متاثر ہوئی ہے۔ اُن کا کہنا ہے کہ یہ تودے مسلسل بارشوں کے باعث گرے ہیں۔

بی بی سی اردو کے نامہ نگار ذوالفقار علی کا کہنا ہے کہ بے گھر ہونے والے افراد اِسی گاؤں میں نسبتاً محفوظ جگہ پر رہائش پذیر اپنے عزیزوں اور دوستوں کے گھروں میں منتقل ہوچکے ہیں۔

متاثرین نے حکومت سے اُن کو نئے گھروں کی تعمیر اور دیگر نقصانات کے ازالے کے لئے معاوضہ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ ضلع گانچے میں بھی تودے گرنے کے باعث کئی گھر تباہ ہوئے تھے۔