جعلی ڈگری: مسلم لیگ کے رکنِ اسمبلی نااہل

فائل فوٹو، مدثر قیوم
Image caption گزشتہ ایک ماہ کے دوران مدثر قیوم مسلم لیگ نواز کے دوسرے رکن قومی اسمبلی ہیں جن کو جعلی ڈگری رکھنے کی وجہ سے نااہل قرار دیا گیا

لاہور ہائی کورٹ کے الیکشن ٹربیونل نے مسلم لیگ نون کے رکن قومی اسمبلی مدثر قیوم ناہرا کو نااہل قرار دیکر ان کی اسمبلی کی رکنیت ختم کردی ہے۔

ہائی کورٹ کے مسٹرجسٹس ناصر سعید شیخ پر مشتمل الیکشن ٹریبونل نےگریجوایٹ نہ ہونے کی بنا پر مدثر قیوم ناہرا کو نااہل قرار دیا اور ہدایت کی کہ انتخابی حلقے میں ضمنی انتخابات کرائے جائیں۔

پیر کو الیکشن ٹربیونل نے یہ حکم مسلم لیگ قاف کے رہنما بلال اعجاز کی اس درخواست کو منظور کرتے ہوئے دیا جس میں رکن اسمبلی بننے کے لیے تعلیمی اہلیت کو چیلنج کیا گیا تھا۔ درخواست گزار کا کہنا ہے کہ مدثر قیوم ناہرا بی اے یعنی گریجوایٹ نہیں ہیں اس لیے رکن اسمبلی بننے کے اہل نہیں تھے۔

مدثرقیوم ناہرا نے سنہ دو ہزار آٹھ میں ہونے والے عام انتخابات میں پنجاب کے ضلع گوجرنوالہ کے قومی اسمبلی کے ایک حلقے سے انتخاب لڑا اور کامیاب ہوئے تاہم ان کی اہلیت کو ان کے مدمقابل مسلم لیگ قاف کے امیدوار بلال اعجاز نے الیکشن ٹربیونل کے سامنے چیلنج کیا۔

لاہور سے نامہ نگار عبادالحق کا کہنا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ کے الیکشن ٹربیونل نے مدثر قیوم ناہرا کی اہلیت کے بارے میں درخواست پر کارروائی مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا تھا اور مدثر قیوم ناہرا کو اسمبلی کی رکنیت سے مستعفی ہونے کے لیے مہلت دی تھی تاہم ٹریبونل نے پیر کو مہلت ختم ہونے پر انہیں نااہل قرار دیا۔

الیکشن ٹربیونل نے الیکشن کمیشن کو ہدایت کی کہ رکن اسمبلی کے نااہل ہونے سے خالی ہونے والی نشست پر ساٹھ دنوں میں نئے انتخابات کرائے جائیں۔

گزشتہ ایک ماہ کے دوران مدثر قیوم مسلم لیگ نواز کے دوسرے رکن قومی اسمبلی ہیں جن کو جعلی ڈگری رکھنے کی وجہ سے نااہل قرار دیا گیا ہے ان سے پہلے سرگودھا سے رکن قومی اسمبلی جاوید حسنین کو جعلی تعلیمی سند کی بنا پر انہیں نااہل قرار دیا تھا۔

مسلم لیگ نون کے قائد نواز شریف نے ارکان اسمبلی سے یہ کہہ چکے ہیں کہ جعلی تعلیمی اسناد رکھنے والے ارکان اسمبلی رضاکارانہ طور پر اپنی رکنیت کو چھوڑ دیں کیونکہ اس سے بڑی شرمندگی ہوتی ہے۔

خیال رہے کہ لاہور کے صوبائی حلقہ پی پی ایک سو ساٹھ میں چوبیس جولائی کو ضمنی انتخابات ہو رہے ہیں یہ نشست مسلم لیگ نون کے رکن اسمبلی رانا مبشر اقبال نااہل ہونے کی وجہ سے خالی ہوئی تھی کیونکہ ہائی کورٹ نے انہیں جعلی تعلیمی سند رکھنے پر نااہل دیا تھا۔

اسی طرح سرگودھا کے صوبائی حلقہ میں چوبیس جولائی کو ضمنی چناؤ ہوگا اور یہ نشست بھی مسلم لیگ نون کے رکن پنجاب اسمبلی کے جعلی ڈگری رکھنے پر خالی ہوئی ہے کیونکہ انھیں اس حلقہ سے نااہل قرار دے دیا گیا تھا۔

اسی بارے میں