وزیرستان:ڈرون حملہ، چار ہلاک

ڈرون طیارہ فائل فوٹو

پا کستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں حکام کا کہنا ہے کہ ایک مبینہ امریکی ڈرون حملےمیں کم سے کم چار افراد ہلاک اور دو زخمی ہوگئے ہیں۔

شمالی وزیرستان میں ایک سرکاری اہلکار نے بی بی سی کو بتایا ’یہ واقعہ سنیچر کی صبح چار بجکر بیس منٹ پر شمالی وزیرستان کے صدر مقام میرانشاہ سے تقریباً پچیس کلومیٹر دور مشرق کی جانب تحصیل میرعلی کے علاقے خُوشحالی میں اُس وقت پیش آیا جب ایک مُبینہ امریکی جاسوس طیارے نے ایک مکان کو نشانہ بنایا۔‘

اہلکار کے مطابق ہلاک ہونےوالوں میں کوئی غیر ملکی شامل نہیں ہےاور تمام افراد حافظ گل بہادر گروپ کے مقامی جنگجو بتائے جاتے ہیں جبکہ لاشوں اور زخمیوں کو مقامی طالبان نے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا ہے۔

سرکاری اہلکار نے پشاور میں موجود بی بی سی کے نامہ نگار دلاور خان وزیر کو بتایا کہ حملے میں مکان کا ایک کمرہ مکمل طور پر تباہ جبکہ قریب ہی ایک مہمان خانے کو بھی نقصان پہنچا ہے۔انہوں نے کہا کہ میزائیل جاسوس طیارے سے داغا گیا تھا۔

مقامی لوگوں کے مطابق سنیچر کی صُبح سے شمالی وزیرستان کے مختلف علاقوں پر جاسوس طیاروں کی پروازیں جاری تھیں اور حملے کے دوران فضا میں تین جاسوس طیارے موجود تھے۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق رواں سال کے دوران شمالی و جنوبی وزیرستان میں ستر کےقریب ڈرون حملے ہو چکے ہیں جس میں دو سو سے زیادہ افراد مارے گئے ہیں جن میں طالبان کے علاوہ زیادہ تر عام شہری بتائے جاتے ہیں۔

اسی بارے میں