بلوچستان: فائرنگ میں آٹھ افراد ہلاک

حبیب جالب فائل فوٹو
Image caption واقعہ کے بعد پی این پی کے کارکنوں نے قلات میں احتجاجی مظاہرہ بھی کیا

بلوچستان میں نامعلوم افراد کی جانب سے فائرنگ کے مخلتف واقعات میں بلوچستان نیشنل پارٹی کے ایک رہنماء سمیت آٹھ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ ہلاک ہونے والوں میں سات کاتعلق ہندو برادری سے ہے۔

بلوچستان نیشنل پارٹی قلات تحصیل کے صدر اور مقامی زمیندار لیاقت مینگل کو منگل کی صبح اس وقت نامعلوم افراد نے گولی مار کر ہلاک کیا جب وہ گاڑی میں اپنے زمینوں کی طرف جارہے تھے۔

قلات پولیس کے مطابق فائرنگ کے بعد حملہ آور موٹر سائیکل پر فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ واقعہ کے بعد بی این پی کے کارکنوں نے قلات میں احتجاجی مظاہرہ بھی کیا۔

خیال رہے کہ ایک ہفتہ قبل نامعلوم افر اد نے بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل حبیب جالب بلوچ کو ان کے گھر کے سامنے گولی مارکر ہلاک کیا تھا۔

دوسری جانب بلوچستان کے ضلع جعفرآباد کی تحصیل صبحت پور میں منگل کے روز موٹر سائیکل پر سوار نامعلوم افراد نے اس وقت دس سے زائد افراد پر فائرنگ کی جب یہ لوگ ایک زیر تعمیر مکان کے قریب کھڑے تھے۔

فائرنگ سےسات افراد ہلاک ہوئے ہیں جن کا تعلق ہندو مذہب سے ہے۔ صبحت پور پولیس نے فائرنگ کے اس واقعہ کو زمین کا تنازعہ قرار دیا ہے۔

واقعہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے ہندو برادری کے تاجروں نے جعفر آباد شہرمیں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی ہے۔

اسی بارے میں