مردان: پانچ حملہ آور ہلاک، چار اہلکار زخمی

پاک فوج فائل فوٹو
Image caption دو حملہ آوروں کی تلاش کا کام جاری ہے: آئی ایس پی آر

صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع مردان میں فوج کے ایک تربیتی مرکز پر ہونے والے حملے میں چار اہلکار زخمی ہوگئے جبکہ جوابی حملے میں تین خودکش بمباروں سمیت پانچ حملہ آور ہلاک ہو گئے ہیں۔

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی طرف سے جاری ہونے والے ایک مختصر بیان میں کہا گیا ہے کہ حملہ آور سات تھے جن میں تین مبینہ خودکش بمبار جب کہ چار حملہ آور ان کو کور فراہم کر رہے تھے۔

بیان کے مطابق سکیورٹی فورسز کی بروقت کارروائی کے باعث تین خودکش بمباروں نے ہدف تک پہنچنے سے قبل ہی خود کو دھماکوں سے اڑا دیا جب کہ دو حملہ آور بعد میں فائرنگ کے تبادلے میں ہلاک ہو گئے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ بچ جانے والے دو حملہ آوروں کی تلاش کا کام جاری ہے۔ اس حملے میں چار سکیورٹی اہلکار بھی زخمی ہوئے۔

اس سے پہلے مردان پولیس کے ایک اہلکار لیاقت علی نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ واقعہ منگل کی صبح مردان شہر میں مالاکنڈ روڈ پر فوج کے ایک تربیتی مرکز پنجاب ریجمنٹ سینٹر میں پیش آیا۔

انہوں نے کہا کہ تین میبنہ خودکش حملہ آوروں نے مرکز میں داخل ہوکر وہاں تربیت حاصل کرنے والے رنگروٹوں پر حملے کی کوشش کی جس میں تین اہلکار زخمی ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ جوابی حملے میں تینوں حملہ آوار مارے گئے۔ ان کے مطابق حملے کے وقت مرکز میں رنگروٹ بڑی تعداد میں موجود تھے۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں اور سکیورٹی فورسز کے مابین تقریباً تین گھنٹے تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا۔ انہوں نے کہا کہ حملہ آوروں نے تین اطراف سے مرکز پر حملے کی کوشش کی تاہم وہاں ڈیوٹی پر موجود اہلکاروں کی بروقت کارروائی کے باعث حملہ آور اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہوسکے۔

پشاور میں ہمارے نامہ نگار رفعت اللہ اورکزئی نے بتایا کہ بعض ذرائع کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں کی تعداد آٹھ تھی جن میں تین خودکش حملے کی غرض آئے تھے جبکہ باقی پانچ حملہ آور خود کش بمباروں کو کور دے رہے تھے۔ تاہم سرکاری طورپر پانچ حملہ آوارں کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے۔

دوسری جانب تحریک طالبان پاکستان کے نائب ترجمان احسان اللہ احسان نے حملے ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ حملہ پاکستان کے قبائلی علاقوں میں جاری آپریشن کا ردِ عمل ہے۔

خیال رہے کہ تقریباً تین سال قبل درگئی میں بھی پنجاب ریجمنٹ سنٹر کے ایک تربیتی مرکز پر ہونے والے خودکش حملے میں پینتس کے قریب فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

اسی بارے میں