وزیرستان: ڈرون حملے میں پانچ غیر ملکی جنگجو ہلاک

ڈرون
Image caption گزشتہ چند ہفتوں سے شمالی وزیرستان میں امریکی ڈورن حملوں میں ایک بار پھر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے

پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں امریکی جاسوس طیارے کے حملے میں مبینہ طور پر پانچ غیر ملکی جنگجو ہلاک اور تین زخمی ہو گئے ہیں۔

مقامی انتظامیہ کے ایک اہلکار کے مطابق اتوار کی شام کو شمالی وزیرستان کی تحصیل دتہ خیل میں پاک افغان سرحد کے قریب پائیو خیل کے مقام پر ایک امریکی جاسوس طیارے سے ایک مکان اور گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔

سرکاری اہلکار کے مطابق امریکی جاسوس طیارے سے تین میزائل داغے گئے۔

مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ جاسوس طیارے کے حملے میں پانچ غیر ملکی جنگجو ہلاک اور تین زخمی ہو گئے ہیں۔ حملے کے نتیجے میں مکان اور گاڑی مکمل طور پر تباہ ہو گئی ہے۔

مقامی انتظامیہ کے اہلکار نے بی بی سی کے نامہ نگار دلاور خان وزیر کو بتایا کہ حملے کے وقت تین امریکی جاسوس طیارے فضا میں پرواز کر رہے تھے۔

مقامی لوگوں کے مطابق لاشیں اور زخمیوں کو مقامی طالبان نے ملبے سے نکال لیا۔

خیال رہے کہ گزشتہ چند ہفتوں سے شمالی وزیرستان میں امریکی ڈورن حملوں میں ایک بار پھر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

گزشتہ بدھ کو امریکی جاسوس طیاروں کے دو حملوں میں سولہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔

اس سے ایک روز پہلے منگل کو ڈرون حملے میں آٹھ غیر ملکی جنگجو ہلاک ہوئے جبکہ گزشتہ اتوار کو بھی شمالی وزیرستان ہی میں اسی طرح کے ایک حملے میں پانچ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

واضح رہے کہ شمالی وزیرستان میں افغان طالبان کمانڈر جلال الدین حقانی گروپ کا بھی بہت بڑا نیٹ ورک موجود ہے اور ان کے ٹھکانے بھی امریکی حملوں کی زد میں ہیں جس سے ان کو کافی حد تک نقصان پہنچنے کی بھی اطلاعات ہیں۔

اسی بارے میں