نیب چیئرمین: ’صدر کا صوابدیدی اختیار ہے‘

پاکستان کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ قومی احتساب بیورو کے چیئرمین کا تقرر صدرِ پاکستان کا صوابدیدی اختیار ہے۔

یہ بات انہوں نے مری میں لارنس کالج گھوڑا گلی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا۔

انہوں نے کہا کہ آئین کے مطابق بیب کے چیئرمین کی تقرری میں وزیر اعظم ایڈوائس نہیں دے سکتا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ نیب چیئرمین کے حوالے سے قائدِ حزب اختلاف کے تحفظات من و عن صدر کو پہنچا دیے تھے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کے چیئرمین کی تقرری کے لیے انہوں نے دو بار قائد حزب اختلاف سے مشاورت کی۔

انہوں نے بتایا کہ صدرِ پاکستان نے پہلے جسٹس ریٹائرڈ مختار جونیجو کا نام تجویز کیا تھا لیکن اس نامزدگی کو قائد حزبِ اختلاف نے مسترد کردیا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ قائد حزب اختلاف چوہدری نثار نے جسٹس ریٹائرڈ دیدار حسین شاہ کی نامزدگی کو بھی مسترد کردیا تھا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ فوج کے سربراہ کا کردار وزراء کی نامزدگیاں کرنا نہیں ہے اور نہ ہی انہوں نے ایسا کیا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پارلیمنٹ کا اپنا کردار ہے اور فوج کا اپنا۔ ’ضرورت پڑنے پر کابینہ میں تبدیلیاں کی جائیں گی جو معمول کا حصہ ہے۔‘

اسی بارے میں