بارودی سرنگ دھماکہ: تین شدت پسند ہلاک

Image caption سوات میں بھی جمعرات کی صُبح سکیورٹی فورسز نے شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی ہے جس میں دو شدت پسند مارے گئے

پاکستان کے قبائلی علاقے کُرم ایجنسی میں حکام کے مطابق شدت پسندوں کی ایک گاڑی بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جس کے نتیجے میں تین شدت پسند ہلاک جبکہ چار زخمی ہوگئے۔

ادھر سوات میں انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورسز نے شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی ہے جس میں دو شدت پسند مارے گئے ہیں۔

کُرم ایجنسی میں ایک سرکاری اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ جمعرات کی صُبح پانچ بجے کےقریب وسطی کُرم میں شدت پسندوں کی ایک گاڑی اس وقت ایک بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جب وہ تین گاڑیوں میں ورمگئی سے مرنڈی جارہے تھے۔انہوں نے کہا کہ دھماکے میں ایک گاڑی مکمل طور پر تباہ جبکہ دو گاڑیوں کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔

اہلکار کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں اورکزئی ایجنسی کے ایک مقامی طالبان کمانڈر حکیم خان اور ان دو ساتھی نواز اور رحیم یار خان شامل ہیں۔انہوں نے بتایا کہ اس واقعہ کے بعد مقامی طالبان نے لاشوں اور زخمیوں کو وسطی کُرم کے کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

اہلکار نے پشاور میں نامہ نگار دلاورخان وزیر کو بتایا کہ حکیم خان کا تعلق تحریک طالبان پاکستان سے بتایا جاتا ہے جو اورکزئی اور کُرم ایجنسی میں شدت پسندوں کے کئی ٹھکانوں کے ’نگران‘ تھے۔

ادھر خیبر پختونخوا کے ضلع سوات میں حکام کا کہنا ہے کہ جمعرات کی صُبح سکیورٹی فورسز نے شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی ہے جس میں دو شدت پسند مارے گئے ہیں۔لیکن مقامی لوگوں کے مطابق سکیورٹی فورسز نے کسی قسم کی کارروائی نہیں کی ہے البتہ ایک نالے سے دو لاشیں ملی ہے۔

سوات میں ایک سرکاری اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ جمعرات کی صُبح سوات کے صدر مقام مینگورہ سے چالیس کلومیٹر دور شمال کی جانب پیوچار کے علاقے میں سکیورٹی فورسز نے قومی امن جرگے کی نشاندہی پر شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی جس کے نتیجے میں دو شدت پسند مارے گئے۔

انہوں نے کہا کہ دونوں شدت پسند رات گئے پیوچار میں داخل ہوگئے تھے۔جب امن جرگے کے لوگوں نے سکیورٹی فورسزکو اطلاع دی تو اس کے بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کرکے کارروائی کی۔

تاہم مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ انھیں پیوچار کے علاقے میں سکیورٹی فوسز کی کسی قسم کارروائی کی اطلاع نہیں ہے البتہ پیوچار میں ایک نالے سے دو شدت پسندوں کی لاشیں ملی ہے جنہیں فائرنگ کرکے ہلاک کیاگیا ہے۔مقامی لوگوں کے مطابق ہلاک ہونے والے دونوں شدت پسند سوات میں فوجی آپریشن کے بعد سے لاپتہ تھے۔

اسی بارے میں