چار ہزار بلوچ نوجوان پاکستانی فوج میں

Image caption بلوچستان کے نوجوان ہر میدان میں اپنا لواہا منوائیں گے:گورنر بلوچستان

گورنر بلوچستان نواب ذوالفقار علی مگسی نے پاکستانی فوج میں بلوچستان کے چار ہزار نوجوانوں کی شمولیت کو خوش آئند اقدام قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچستان کے نوجوان محب وطن ہیں اور وہ ملک کے دفاع کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

چیف آف آرمی سٹاف جنرل اشفاق پرویز کیانی کی خصوصی ہدایت پر بلوچستان سے چار ہزار نوجوانوں پاک فوج میں بھرتی کیا گیا ہے۔ بھرتی ہونے والے ان جوانوں کی پاسنگ آؤٹ پریڈ جمعہ کو کوئٹہ، سبی، خضدار، کشمور اور ژوب میں ہوئی۔

بھرتی ہونے والے ان جوانوں کو تعلیم، عمر اور قد میں بھی خصوصی رعایت دی گئی ہے۔

کوئٹہ میں بھرتی ہونے والے جوانوں کے پاسنگ آؤٹ پریڈ کی تقریب کے مہمانِ خصوصی گورنر بلوچستان نواب ذوالفقارمگسی تھے۔ پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے گورنر بلوچستان نے کہا کہ ملک انتہائی نازک مرحلے سے گزر رہا ہے اور پاکستان کی سالمیت کو نقصان پہنچانے والے ہاتھوں کو قومی یکجہتی کے ذریعے ہی ناکام بنایا جا سکتا ہے۔

کوئٹہ سے بی بی سی کے نامہ نگارایوب ترین کے مطابق نواب ذوالفقار مگسی کا کہنا تھا کہ بلوچستان کے نوجوان کسی سے پیچھے نہیں اور ملکی خدمت کا جذبہ ان میں بھی موجود ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’بلوچستان کے لیے آج کی تاریخ ایک پرمسرت دن ہے اور ہمیں فخر ہے کہ آج کے دن بلوچستان کے نوجوان بھی پاک فوج کا حصہ بن رہے ہیں جس پر میں انہیں اور ان کے اہل خانہ اور بالخصوص کمانڈر سدرن کمانڈ اور نوجوانوں کو تربیت دینے والے افسران کو مبارکباد پیش کرتا ہوں‘۔

ان کا کہنا تھا کہ آنے والے وقتوں میں ملک کو بلوچستان کے ان نوجوانوں کی جہاں بھی ضرورت پڑی وہ اپنی خدمات پیش کریں گے۔ ’آج میں بلوچستان کے نوجوانوں کی آنکھوں میں جو چمک دیکھ رہا ہوں اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ بلوچستان کے نوجوان ہر میدان میں اپنا لواہا منوائیں گے‘۔

گورنر نے کہا کہ پاک فوج نے بلوچستان کی تعلیمی پسماندگی کو مدنظر رکھ کر محب وطن نوجوانوں کو فوج میں جو مقام دیا ہے اس سے آنے والے دنوں میں مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔

پاک فوج بلوچستان کےچارہزار سے زائد بلوچ طالب علموں کو مختلف علاقوں میں تعلیم کے مواقع فراہم کر رہی ہے جس سے تعلیمی شعبے میں بھی مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔

اس سے قبل پاسنگ آؤٹ پریڈ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کمانڈر سدرن کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل جاوید ضیاءنے کہا کہ بلوچ نوجوانوں کی پاک فوج میں شمولیت وفاق پاکستان سے محبت کا منہ بولتا ثبوت ہے اور بلوچستان میں آج ایک نئی تاریخ رقم ہونے جا رہی ہے۔

لیفٹیننٹ جنرل جاوید ضیاء کا کہنا تھا کہ ’بلوچستان کے عوام دوسرے صوبوں کے عوام کی طرح ہر مشکل گھڑی میں ثابت قدم رہے ہیں اور اپنی فوج کے شانہ بشانہ جدوجہد کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ترقی کے ہر عمل میں بلوچستان کے عوام ہمارے ساتھ ہیں‘۔

پریڈ کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے جنرل جاوید ضیا ء نے کہا کہ آنے والے سالوں میں پاکستانی فوج میں بلوچستان سے مزید دس ہزار نوجوانوں کو بھرتی کیا جائے گا۔

تربیت کے دوران بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے آوران اور کوئٹہ کے جوانوں نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ انہیں فخر ہے کہ وہ پاکستان آرمی کا حصہ بن گئے ہیں جس طرح انہوں نے تربیت کے دوران بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرکے انعام حاصل کیا آئندہ بھی وہ اپنی بہترین کارکردگی کے ذریعے نہ صرف صوبے بلکہ پاک فوج اور ملک کا نام روشن کریں گے۔

اسی بارے میں