وکی لیکس کے بانی کی گرفتاری کے خلاف درخواست مسترد

جولین اوسانش
Image caption انٹرپول نے اوسانش کے خلاف ریڈ نوٹس جاری کیا ہے

سویڈن کی اعلٰی عدالت نے وکی لیکس کے بانی جولین اسانش کی گرفتاری کے خلاف درخواست مسترد کر دی ہے۔اسانش پر جنسی زیادتی کے الزامات ہیں۔

وکی لیکس روک تھام

عافیہ بگرام میں نہیں تھیں

پاکستان جوہری ہتھیار

عدالت کا کہنا ہے کہ مسٹر اسانش کو اس مقدمے کے فیصلے کے خلاف اپیل کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

افغانستان کے بارے میں دستاویز جاری کرنے کے بعد اسانش سویڈن گئے تھے جہاں انہوں نے رہائش اور کام کرنے کے ویزہ کے لیے درخواست دی تھی۔

سویڈن میں انہیں دو خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزام کا سامنا کرنا پڑا جو اب ان کی آزادی کے لیے بڑا خطرہ بن سکتا ہے۔اسانش اس الزام کی تردید کرتے ہیں ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے دونوں خواتین کی مرضی سے ہی ان کے ساتھ جنسی تعلق قائم کیا تھا۔انٹرپول نے جولین اسانش کا پتہ لگانے کے لیے ریڈ نوٹس جاری کیا ہے۔

اسانش پر یہ مقدمہ ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب ان کی ویب سائٹ وکی لیکس کی جانب سے ڈھائی لاکھ امریکی سفارتی دستاویز جاری کیے گئے ہیں۔

وکی لیکس پر شائع شدہ امریکی خفیہ سفارتی پیغامات کے مطابق سپین کے ایک سینئر پراسیکیوٹر نے میڈرڈ میں امریکی سفارت خانے کو بتایا تھا کہ روس، بیلا روس اور چیچنیا بظاہر مافیا ریاستیں بن چکی ہیں۔

اسی بارے میں