امریکی شدت پسند لسٹ میں کون

شدت پسندوں کا اسلحہ: فائل فوٹو
Image caption ان شدت پسندوں میں سے دو کا تعلق لشکرِ جھنگوی جبکہ ایک کا تعلق جیش محمد سے تھا

امریکہ نے پاکستان کی کالعدم شدت پسند تنظیموں لشکر جھنگوی اور جیش محمد کے جن تین رہنماؤں کو دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرنے کا اعلان کیا ہے وہ پاکستان کے جہادی حلقوں میں نمایاں حیثیت رکھتے ہیں۔

امان اللہ خان آفریدی پاکستان کی کالعدم تنظیم لشکر جھنگوی کے رہنما ہیں اور وہ پاکستان کے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو سب سے زیادہ مطلوب افراد میں سے ایک ہیں۔

امریکی حکام کے مطابق وہ تنظیم کے ایسے رہنما رہے ہیں جو کئی سال تک لشکر جھنگوی کی شدت پسند کارروائیوں کی منصوبہ بندی اور ان کی سمت طے کرتے رہے ہیں۔

امریکی حکام کے مطابق انہوں نے القاعدہ کو کارروائیوں کے لیے خود کش جیکٹس فراہم کیں اور خود کش حملہ آوروں کو تربیت دینے کے ساتھ ساتھ مقتول شعیہ مذہبی رہنما علامہ حسن ترابی پر حملہ کرنے والوں کو بھی تربیت دی۔

وہ مفتی الیاس، امان اللہ عرس اور محمد گل کے ناموں سے معروف ہیں۔

مطیع الرحمان بھی پاکستان کے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلوب ہیں اور ان کے بارے کہا جاتا ہے کہ وہ لشکر جھنگوی کے چیف آپریشنل کمانڈر ہیں۔ امریکی حکام کا الزام ہے کہ وہ القاعدہ کے لیے بھی کام کرتے رہے ہیں۔

امریکی حکام کا یہ بھی کہنا ہے کہ ستمبر دو ہزار نو میں پہلی بار یہ نشاندہی کی گئی کہ وہ القاعدہ کے اہم عہدیدار ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ’وہ اگست دو ہزار چھ میں امریکہ جانے والے برطانوی طیارے کو تباہ کرنے کی سازش میں بھی ملوث رہے ہیں۔‘

ان پر یہ بھی الزام ہے کہ وہ ان شدت پسندوں کی قیادت بھی کرتے رہے ہیں جو پاکستان میں حملوں کے حامی ہیں۔

مطیع الرحمان پر پاکستان کے سابق فوجی صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف، سابق وزیر اعظم شوکت عزیز اور کراچی میں امریکی قونصل خانے پر حملوں کی سازش کرنے یا حملے کرنے کے بھی الزامات ہیں۔ وہ عبدالصمداور صمد سیال کے ناموں سے معروف ہیں۔

عبدالرؤف اظہر کالعدم پاکستانی تنظیم جیش محمد کے سینیئر رہنما ہیں۔ ان کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ دو ہزار سات میں جیش محمد کے قائم مقام سربراہ بھی رہ چکے ہیں اور وہ تنظیم کے انٹیلیجنس کوآرڈینیٹر بھی رہے ہیں۔

امریکی حکام کے مطابق سن دو ہزار آٹھ میں اظہر کو بھارت میں خود کش حملے کرانے کی ذمہ داری دی گئی تھی۔ وہ تنظیم کے سیاسی شعبہ کے علاوہ تربیتی کیپموں کے ساتھ بھی منسلک رہے ہیں۔

عبدالرؤف اظہر سن انیس سو چوہتر میں پنجاب کے علاقے بہاولپور میں پیدا ہوئے اور وہ عبدالرؤف علوی کے نام سے بھی معروف ہیں۔

اسی بارے میں