’کراچی کو علیحدہ صوبہ بنائیں‘

Image caption کچھ عرصے سے سرائیکی صوبے کی بحث میں تیزی آ گئی ہے

پاکستان میں نئے صوبوں کے مطالبات اور بحث مباحثوں میں ایک نیا اضافہ ہوا ہے۔ مسلم لیگ نون کے رہنما اور پنجاب کے وزیر اعلیٰ میاں شھباز شریف نے کہا ہے کہ کراچی کو بھی صوبہ بننا چاہیے۔

ڈیرہ غازی خان میں اتوار کو دانش سکول کی تقریب کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسلم لیگ نون کے رہنماء شہباز شریف کا کہنا تھا وہ نئے صوبوں پر پارٹی پالیسی بنا رہے ہیں۔ ’ہم ایک پالیسی بنائیں گے کہ کیا پنجاب میں نئے صوبے بنانے چاہئیں یا کراچی کو بھی صوبہ بنانا چاہیے یا کسی اور جگہ صوبے کی ضرورت ہے پورے ملکی سطح پر گفتگو کی جائیگی۔‘

پاکستان میں سرائیکی صوبے کی تحریک کئی عشروں سے جاری ہے لیکن کچھ عرصے سے اس بحث میں تیزی آ گئی ہے۔

صوبہ سرحد کا نام جب خیبر پختون خواہ رکھا گیا تو ہزارہ صوبے کا مطالبہ سامنے آیا، جس کی بھی کئی جماعتیں حمایت کر رہی ہیں مگر اس کے مقابلے میں سرائیکی صوبہ پر بحث سنجیدہ صورتحال اختیار کر رہی ہے، پیپلز پارٹی نے اپنے منشور میں بھی اسے شامل کرنے کا اعلان کیا ہے ۔

پنجاب کے وزیراعلیٰ میاں شھباز شریف کے کراچی صوبے کے بارے میں بیان پر پاکستان پیپلز پارٹی سندھ اور صوبائی حکومت نے سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات شرجیل انعام میمن کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ کا بیان تعصب پرستی پر مبنی ہے۔‘

سندھ کی قوم پرست جماعتیں بھی سرائیکی قوم پرست جماعتوں اور دانشوروں کی حمایت اور اتحادی رہی ہیں۔ میاں شھباز شریف کے بیان کو جئے سندھ قومی محاذ کے چیئرمین بشیر قریشی نے سندھ کے خلاف سازش قرار دیا ہے۔

’ سندھ کی ہزاروں سالوں سے اپنی علیحدہ حیثیت اور شناخت رہی ہے، اس دھرتی کو تقسیم کرنے کی بات کرنا سندھی قوم کو گالی دینے کے برابر ہے۔ سندھ کے لوگ اپنی دھرتی کی تقسیم کسی صورت میں برداشت نہیں کریں گے۔‛

ان کا کہنا تھا کہ شھباز شریف سندھ میں خانہ جنگی کرانا چاہتے ہیں کیونکہ تقسیم کی بات کرنا قومی غیرت کو للکارنے کے مترادف ہوگا ۔

دوسری جانب کراچی کی نمائندہ جماعت متحدہ قومی موومنٹ نے کہا ہے کہ وہ سندھ کی وحدت پر یقین رکھتے ہیں، کراچی صوبہ کی بات کا مقصد صوبہ پنجاب میں نئے صوبوں کے مطالبات کو ٹالنا ہو سکتا ہے۔

رابطہ کمٹی کے رکن قاسم علی رضا نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایم کیو ایم کا یہ موقف ہے کہ نئے صوبوں کے قیام کے حوالے سے عوامی ریفرنڈم کرائے جائیں اور عوام کی خواہشات اور امنگوں کے مطابق مطالبات پورے کئے جائیں۔

انہوں نے کہاکہ یہ بات سمجھ سے بالاترہے کہ شہبازشریف نے سندھ میں صوبے کی بات کیوں کی کیونکہ نہ توسندھ کے عوام نے کبھی سندھ کی تقسیم کی بات کی اور نہ کبھی کراچی کے لوگوں نے کراچی کوصوبہ بنانے کی بات کی ہے۔

اسی بارے میں