فیصل آباد: شرانگیز پمفلٹ کی تقسیم

Image caption فیصل آباد کے احمدی تاجروں کا کہنا ہے کہ پہلی بار ان کے نام اس طرح پمفلٹ میں آئے ہیں

فیصل آباد میں ایک ایسا پمفلٹ تقسیم کیاگیا ہے جس میں اقلیتی فرقے احمدیوں کو گولی مارنا ایک ثواب کاکام قرار دیاگیا ہے تاہم پمفلٹ پر جس تنظیم کا نام درج کیاگیا ہے اس کے عہدیداروں نے اس پمفلٹ کی اشاعت اور تقسیم سے لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔

لاہور سے نامہ نگار علی سلمان کے مطابق فیصل آباد کے مختلف بازاروں میں تقسیم کیے جانے والے اس پمفلٹ پر ختم نبوت زندہ باد اور قادیانیت مردہ باد لکھا ہے اور یہ سوال اٹھایا گیا ہے کہ قادیانیوں یااحمدیوں کو کون لگام دےگا؟اور یہ جملہ لکھا ہے کہ ایسے لوگوں کو بھرے بازار میں گولی مارناجہاد اور ان کو مارنا بھی ثواب ہے۔

یہ بھی کہا ہے ختم نبوت کے نڈر مجاہد بنیں اور ان کوقتل کرکے شہادت کا رتبہ حاصل کریں۔ اس پمفلٹ میں جہاں یہ لکھا ہے کہ احمدیوں کو قتل کیا جائے وہیں فیصل آباد کے تیس سے زائد افراد اور اداروں کے ناموں کی فہرست اس پمفلٹ میں شامل ہے۔

ان افراد میں اجر، ڈاکٹر، اساتذہ، صنعت کار اور کار ڈیلروغیرہ شامل ہیں۔جماعت احمدیہ کہ ترجمان سلیم الدین کاکہناہے کہ اس پمفلٹ کے بعد فیصل آباد کی احمدی برداری میں خوف پایا جاتا ہے اورانہوں نے پولیس کو اطلاع کی ہے۔

اس پمفلٹ میں جو پہلا نام مراد کلاتھ ہاؤس کا ہے جس کے مالک دو بھائیوں اور ان میں سے ایک کے بیٹے کو ایک ہی واقعہ میں فائرنگ کرکے قتل کیا گیا۔اس سے پہلے ایک پھل فروش اور ایک دکاندار قتل ہوچکے ہیں۔فیصل آباد کے احمدی تاجروں کا کہنا ہے کہ پہلی بار ان کے نام اس طرح پمفلٹ میں آئے ہیں اور اب انہیں دھمکی آمیز فون آرہے ہیں۔

اس پمفلٹ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت شفاعت محمدی صلی اللہ علی وسلم اور ایک ٹیلی فون نمبر بھی درج ہے۔

اس نمبر پر فون کیا ایک صاحب نے اپنا نام منیر احمد بتایا اور اس تنظیم کے ایک مبلغ کی حثیت سے اپنا تعارف کروایا البتہ انہوں نے کہا کہ یہ پمفلٹ ان کی تنظیم نے شائع اور تقسیم نہیں کیا۔

منیر احمد نے کہا کہ احمدیوں سمیت کسی کو بھی سزا دینے کا کام حکومت کا ہے اورانفرادی سطح پریہ کام نہیں ہوسکتا البتہ انہوں نے کہا وہ یہ تبلیغ ضرور کرتے ہیں کہ احمدیوں سے کارباری اور ذاتی تعلقات نہ رکھے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ یا تو یہ پمفلٹ خود احمدیوں نے شائع کرکے اپنے لیے ہمدردیاں حاصل کرنے کی کوشش کی ہے یا پھر یہ کچھ سر پھرے لوگوں کا کام بھی ہوسکتا ہے۔

اسی بارے میں