سندھ:شدید بارشیں اور طغیانی، اٹھارہ ہلاک

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption سیلاب کے سبب زبردست نقصان کا سامنا ہے

پاکستان کے صوبہ سندھ میں شدید بارشوں اور نہروں اور ندی، نالوں میں طغیانی سے بڑے پیمانے پر جانی اور مالی نقصان ہوا ہے اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد اٹھارہ تک پہنچ گئی ہے۔

بارشوں کا سلسلہ گزشتہ چار روز سے وقفے وقفے سے جاری ہے جس کے باعث حیدرآباد، سکھر، گھوٹکی، سانگھڑ، میرپورخاص، عمرکوٹ، بدین، نوابشاہ اور نوشہرو فیروز میں کئی گاؤں زیر آب آچکے ہیں۔

بارشوں کے باعث ندی، نالوں اور نہروں میں طغیانی سے نوابشاہ، سکرنڈ، ڈھرکی، میھڑ، گڑھی خیرو اور ٹھٹہ میں نہروں میں شگاف پڑے ہیں۔ صوبائی حکام نے بینظیر آباد سمیت سات اضلاع کو آفت زدہ قرار دیا ہے جبکہ ٹنڈو محمد خان میں پانی میں پھنسے افراد کے انخلاء کے لیے فوج کی مدد حاصل کی گئی ہے۔

قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے کے سربراہ کا کہنا ہے کہ حالات تشویش ناک ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ گزشتہ تین دن کے دوران مختلف واقعات میں اٹھارہ افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہو چکی ہے۔

Image caption کئی علاقوں میں سیلاب کے سبب لوگ نقل مکانی پر مجبور ہیں

سرکاری خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق ہلاکتوں کے تازہ واقعات خیرپور، دادو، بینظیر آباد اور میرپور خاص میں پیش آئے ہیں۔ میر پور خاص میں مختلف واقعات میں پانچ افراد ہلاک ہوئے جبکہ دادو میں تین بچوں سمیت پانچ، بینظیر آباد اور خیر پور میں دو دو جبکہ ضلع بدین میں چار افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

دوسری جانب نوابشاہ، سانگھڑ، میرپورخاص اور بدین میں بارشوں کے بعد ایل بی او ڈی سیم نالے میں طغیانی آگئی ہے، گزشتہ ماہ نالے میں شگاف پڑنے سے ہزاروں لوگ بے گھر ہوئے تھے جو ابھی تک سرکاری اور نجی کیمپوں میں موجود ہیں۔

پانی کی نکاسی نہ ہونے اور امداد نہ ملنے پر تلھار، محراب پور، نوابشاہ، گولاڑچی اور بدین میں لوگوں نے احتجاجی جلوس نکال کر دھرنے بھی دیے ہیں۔ تلھار میں احتجاج کے دوران سیلاب متاثرین اور پولیس کی جھڑپیں ہوئی ہیں، جس میں پولیس کی فائرنگ سے دو متاثرین زخمی ہوگئے۔

ادھر محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ بارشوں کا یہ سلسلہ چھ ستمبر تک جاری رہے گا اور جمعہ کو بینظیر آباد میں انہتر، میر پورخاص میں پچاس، دادو میں اڑتالیس، مٹھی میں تینتالیس، بدین میں چوبیس جبکہ حیدرآباد میں اٹھائیس ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔۔

..

اسی بارے میں