دھماکے میں اے این پی کے رہنما ہلاک

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption دھماکہ میں گاڑی پوری طرح تباہ ہوگئی ہے

صوبہ خیبر پختونخوا کے شمالی ضلع لوئر دیر میں پولیس کے مطابق ایک بارودی سرنگ کے دھماکے میں عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی صدر ہلاک اور پانچ افراد زخمی ہوئے ہیں۔

پولیس اہلکار عزیز خان نے بی بی سی کے نامہ نگار دلاورخان وزیر کو بتایا ہے کہ منگل کی صُبح صدر مقام تیمرگرہ سے کوئی بیس کلومیٹر دور شمال کی جانب تحصیل لعل قلعہ میں عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی صدر شیر خان کی گاڑی اس وقت ایک بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی جب وہ اپنے گاؤں بانڈئی سے لعل قلعہ بازار جارہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ دھماکے میں شیر خان سمیت چھ افراد زخمی ہوئے تھے اور بعد میں شیرخان تیمرگرہ ضلعی ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسے۔

اہلکار کے مطابق زخمیوں میں دو پولیس اہلکار اور تین راہ گیر شامل ہیں۔ اہلکار کے مطابق پچاس سالہ شیر خان دیر میں طالبان کے مخالف تھے جس کی وجہ سے ہر وقت ان پر طالبان کی جانب سے حملے کا خطرہ رہتا تھا۔

اہلکار نے بتایا کہ شیر خان کی حفاظت کے لیے صوبائی حکومت نے دو پولیس اہلکار مقرر کیے تھے جو ان کے ساتھ دھماکے میں زخمی ہوئے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ دھماکے میں گاڑی بھی مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہے۔

یاد رہے کہ اس سے پہلے بھی دیر میں عوامی نیشنل پارٹی کے کئی کارکنوں پر حملے ہوچکے ہیں اور سب سے بڑا حملہ گزشتہ سال اپریل میں تیمرگرہ کے مرکزی بازار میں ہوا تھا جس کے نتیجہ میں تینتالیس افراد ہلاک اور اکاسی زخمی ہوگئے تھے۔

یہ دھماکہ اے این پی کی ریلی میں ہوا تھا اور کچھ عرصہ پہلے صوبائی وزیر تعلیم سردار بابک پر بھی حملہ ہوا تھا جس میں وہ زخمی ہوئے تھے۔

اسی بارے میں